منشیات رکھنے کے الزام میں امریکی گلوکارہ ایمسٹرڈیم کے ہوائی اڈے پر گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ڈچ حکام نے امریکی ریپر نکی میناج کو منشیات رکھنے کے الزام میں گرفتار کیا۔ وہ گرفتاری سے چند گھنٹے قبل برطانیہ کے شہر مانچسٹرمیں ایک بہت بڑا کنسرٹ کرنے کے لیے روانہ ہوئیں۔

"بیگ کی تلاشی"

41 سالہ نکی میناج نے انسٹاگرام پر پوسٹس کا ایک سلسلہ لکھاجس میں اس نے کہا کہ ایمسٹرڈیم کے شیوول ہوائی اڈے پر اسے روکا گیا اور اس کے بیگ کی اس کی مرضی کے بغیر تلاشی لی گئی۔

اس نے کہا کہ ہوائی اڈے کے حکام نے اسےمطلع کیا کہ اس کے سامان کے اندر سے منشیات ملی ہیں۔ اس کے باوجود کہ کسٹم حکام نے پہلے اس کی جانچ کی تھی۔

"وجہ افسر کی ناراضگی"

امریکی گلوکارہ نے ایک شخص کے ساتھ اپنی گفتگو کا ایک ویڈیو کلپ شائع کیا جسے بعد میں اس نے فلائٹ کے انچارج پائلٹ کے طور پر شناخت کیا۔ اس نے اسے بتایا کہ ایئرپورٹ حکام نے اس کے بیگ کی تلاشی لینے کا فیصلہ کیا ہے، جس کی وجہ ایک افسر کی ناراضگی ہے۔

"چرس قانونی ہے"

اس نے نشاندہی کی کہ "ایمسٹرڈیم میں چرس کا استعمال قانونی ہے، لیکن اسے ایک سازش کی وجہ سے ہراساں کیا جا رہا ہے جس میں اسے مانچسٹر پہنچنے اور اس کے کنسرٹ کے انعقاد سے روکنے کے لیے کئی لوگوں کو رشوت دی گئی تھی۔ اسے شبہ ہے کہ اس میں پائلٹ کے ملوث ہے۔

"گواہی کے لیے طلب"

نکی میناج نے کہا کہ اسے اس کے سکیورٹی ملازم کے بارے میں گواہی دینے کے لیے طلب کیا گیا تھا، جس نے کہا کہ جائز حد سے زیادہ چرس اس کی ملکیت ہے اور گلوکار کا ان سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

پھر KLM کے ترجمان رابرٹ وان کیپل نے NBC کو ایک بیان دیتے ہوئے کہا کہ "ہم اس بات کی تصدیق کر سکتے ہیں کہ ہم نے شیوول ہوائی اڈے پر ایک 41 سالہ امریکی خاتون کو ہلکی نشہ آور چیز رکھنے کی وجہ سے گرفتار کیا ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں