سرحد پر فائرنگ کی وجہ اسرائیلی فلسطینی جھڑپ بنی: مصری سکیورٹی ذرائع

فلاڈیلفیا کے محور پر حملے سے ایسے حالات پیدا ہوجاتے جن پر قابو پانا مشکل ہوتا ہے:مصری اہلکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر کے ایک باخبر سکیورٹی ذریعے نے مصری الاخباریہ چینل کو تصدیق کی ہے کہ اسرائیل اور مصر کی درمیانی سرحد پر فائرنگ اور ایک مصری فوجی کے جاں بحق ہونے کے واقعے کی ابتدائی تحقیقات سے ظاہر ہوتا ہے کہ اسرائیلی فورسز کے ارکان اور فلسطینی مزاحمت کاروں کے درمیان گولی چلائی گئی تھی۔ اس کے نتیجے میں کئی سمتوں سے فائرنگ شروع ہوگئی اور مصری سکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے بھی حفاظتی اقدامات کے طور پر فائرنگ کی گئی۔

ایک ذریعے نے قاہرہ نیوز چینل کو بتایا کہ قاہرہ نے رفح میں مصری اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان فائرنگ کے بعد سرحد پر تعینات مصری سکیورٹی اہلکاروں کی سلامتی اور حفاظت کے حوالے سے خبردار کیا ہے اور اس حوالے سے کوئی سمجھوتہ نہ کرنے کا بتایا ہے۔ ذریعے نے قاہرہ نیوز کو بتایا کہ اس واقعہ کی تفصیلات جاننے کے لیے تحقیقاتی کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی ہیں تاکہ ذمہ داروں کا تعین کیا جا سکے اور مستقبل میں ایسے واقعات سے بچا جا سکے۔

سیکیورٹی ذریعہ نے بتایا کہ بین الاقوامی برادری کو غزہ اور فلاڈیلفیا کے محور کے ساتھ مصری سرحد پر صورت حال کی سنگینی کے بارے میں اپنی ذمہ داریوں کو نبھانا چاہیے۔ نہ صرف سیکورٹی مقاصد بلکہ انسانی امداد کے بہاؤ کے راستوں کے حوالے سے بھی یہاں زیادہ توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مصر نے فلاڈیلفیا کے محور میں اسرائیلی فوجی کارروائیوں کے اثرات سے خبردار کیا ہے۔

دریں اثنا قاہرہ میں العربیہ کے نامہ نگار نے مصری سکیورٹی ذرائع کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ فلاڈیلفیا کے محور پر حملے سے ایسے میدانی حالات پیدا ہوجاتے ہیں جن پر قابو پانا مشکل ہوجاتا ہے۔ اس صورت حال سے کشیدگی بڑھنے کا امکان ہے۔

واضح رہے پیر کو سرحد پر فائرنگ کے تبادلے میں ایک مصری فوجی مارا گیا تھا۔ ابتدائی طور پر فائرنگ کی وجہ نہیں بتائی گئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں