آہنی عزم رکاوٹیں عبور کراتا گیا، نابینا خاتون نے میڈیا سائنسز میں گریجویشن کرلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب میں ایک نابینا خاتون نے اپنے آہنی عزم کو بروے کار لاتے ہوئے شاندار کامیابی حاصل کرکے دنیا کو حیران کردیا۔ پورے عزم کے ساتھ شاندار جدوجہد جاری رکھتے ہوئے ریم العبد الھادی نے یونیورسٹی کی ڈگری حاصل کی۔ بصارت سے محرومی ریم العبد الھادی کو کنگ عبد العزیز یونیورسٹی سے میڈیا اور کمیونیکیشن کے شعبہ میں نمایاں اعزاز کے ساتھ گریجویشن مکمل کرنے سے نہ روک سکی۔

گریجویشن کے دوران نابینا لڑکی کی اس وقت کی خوشی کی ویڈیو وائرل ہوگئی جب والد نے اپنی بیٹی کو خوشی اور مسرت سے بھرا پیغام بھیجا ۔ اپنے پیغام میں والد نے ریم کو کہا " خوش آمدید اور سینکڑوں مبارکبادیں ہوں ۔ میں آپ کے لیے خوشخبری لایا ہوں کہ اللہ کا بہت شکر ہے کہ اسی کی مدد سے آپ کا کنگ عبدالعزیز یونیورسٹی سے گریجویشن مکمل ہوگیا۔

منیرہ العبد الھادی کی کہانی اس وقت شروع ہوئی جب اس کے والد محمد نے "X" پر ایک ویڈیو کلپ شائع کیا جس میں انہوں نے مشرقی سعودی عرب کے شہر دمام کے کنگ فہد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر اپنی بیٹی کا استقبال کیا جو بیچلر کی ڈگری لیکر واپس آ رہی تھی۔

محمد العبد الہادی نے ’’ العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میری سب سے بڑی بیٹی منیرہ جو نابینا ہے نے میڈیا اور کمیونیکیشن کے شعبہ میں گریجویشن کر کے مجھے بے حد خوشی کا احساس دلایا ہے۔ میری خوشی اس وقت مزید بڑھ گئی جب سوشل میڈیا پر صارفین نے بیٹی کی گریجویشن مکمل ہونے پر زبردست رد عمل دیا ۔ ایک ملین سے زیادہ تبصرے کئے گئے۔

ناقابل بیان احساس

محمد عبدالہادی نے مزید کہا کہ کمیونٹی نے ہمیں پیغامات اور برکتوں سے لبریز کردیا ہے۔ خاندان کے جذبات اور بیٹی کی والدہ اور میرے احساسات ناقابل بیان ہیں۔ ہماری کوششیں کئی سالوں سے شروع ہونے والے بڑے خوف اور بڑے چیلنجوں کے بعد رنگ لائی ہیں۔ پری پرائمری اور پرائمری مرحلہ سے لیکر گریجویشن تک کے مراحل کے دوران چیلنجز کا سامنا رہا۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر نابینا لڑکی کے والد کا ویڈیو کلپ پھیلایا گیا جس میں وہ اپنی بیٹی کی یونیورسٹی میں فرسٹ کلاس آنرز کے ساتھ گریجویشن کا جشن منا رہے ہیں۔ اس کلپ میں نابینا بیٹی بھی والد کے ساتھ خوشی کا اظہار کر رہی ہے۔

اس وقت جب لڑکی نے اپنے والد سے اپنا بیگ اٹھانے میں مدد کرنے کو کہا تو والد نے حیران کن جواب دیا اور کہا میں صرف بیگ ہی نہیں بلکہ آپ کو اپنے سر پر بٹھاؤں گا۔ جواب میں بیٹی نے شائستگی اور ادب کے ساتھ کہا اللہ آپ کا سایہ ہمارے سروں پر سلامت رکھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں