کئی برسوں بعد مصر میں روٹی کی 'سبسڈائز' کی قیمت میں اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصر کو عام طور پر دنیا میں سب سے بڑا گندم درآمد کرنے والا ملک سمجھا جاتا ہے۔ اس نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اعانتی روٹی دینے کے معاملے میں تبدیلی لاتے ہوئے روٹی کی قیمت میں اضافہ کرے گا۔

یہ ایک بڑا سیاسی مضمرات رکھنے والا فیصلہ ہوگا۔ جسے صدر السیسی کی حکومت نے کئی برسوں سے روک رکھا تھا۔ تاہم اب نئی صدارتی انتخاب میں جیت کے بعد یہ مشکل فیصلہ کرنے کا مرحلہ آچکا ہے۔

بتایا گیا ہے کہ روٹی کی قیمت میں تین سو فیصد اضافہ ہوگا۔ وزیراعظم مصطفیٰ مدبولی نے ایک پریس کانفرنس کے دوران بدھ کے روز کہا ہے کہ اس نئے فیصلے پر عمل درآمد یکم جون سے ہوگا۔

واضح رہے کہ اس اعانتی روٹی سے مصر کی مجموعی آبادی کا دو تہائی حصہ فائدہ اٹھاتا ہے اور ہر روز پانچ سستی روٹیوں کا پیکٹ اس اعانتی قیمت کے تحت خریدتا ہے۔

1977 میں جب سستی روٹی کو مہنگا کرنے کی کوشش کی گئی تو ملک میں فسادات شروع ہوگئے تھے۔ اس سستی و اعانتی روٹی کے نظام کو غریب لوگوں کے لیے زندگی کا نظام چلانے میں اہم سمجھا جاتا ہے۔ تاہم اس پر تنقید کرنے والے بھی موجود ہیں جو اسے قومی وسائل کا ضیاع سمجھتے ہیں۔

مصر میں اعانتی روٹی کی قیمت بڑھانے کا فیصلہ مصری کرنسی میں حالیہ گراوٹ کے بعد کیا گیا ہے۔ ماہ مارچ کے دوران کرنسی کی قدر کم ہوگئی تھی۔ کیونکہ پچھلی گرمیوں میں افراط زر کے نئے ریکارڈ قائم ہوگئے تھے۔

وزیراعظم نے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا 'ہم پوری طرح جانتے ہیں کہ روٹی کے نرخ بڑھانا ایک مشکل کام ہے اور حکومت نے ماضی میں اس سے بچنے کی بھی بڑی کوشش کی ہے۔ لیکن اب ہم حکومتی بجٹ پر 'سبسڈی' کا بوجھ دیکھتے ہیں تو ہمیں یہ فیصلہ کرنا پڑا۔ '

پچھلے دو سال کے دوران مصر کو زر مبادلہ کی شدید کمی کا سامنا رہا ہے۔ تاہم اس سال فروری سے مصر کے آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے معاہدے کے نتیجے میں بہتری آنا شروع ہوئی ہے۔ متحدہ عرب امارات نے بھی آئی ایم ایف کے بعد بہت بڑی سرمایہ کاری کرنے کا عندیہ دیا ہے۔

اعانتی روٹی کی قیمت میں اضافے کا سبب روٹی کی لاگت میں 16 فیصد اضافہ بنا ہے۔ اس لیے حکومت کا روٹی کی قیمت میں اضافہ کرنا مجبوری بن گیا ہے۔

مصر نے سال 2023 میں 10 اعشاریہ88 ملین میٹرک ٹن گندم درآمد کی ہے۔ جو سال 2022 کے مقابلے میں 14 اعشاریہ 7 فیصد اضافہ ہے۔ خیال رہے 2022 میں 9 اعشاریہ 48 ملین ٹن گندم درآمد کی گئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں