اقوام متحدہ : انسانی حقوق سربراہ نے جوبائیڈن کی جنگ بندی تجویز کی حمایت کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق سربراہ وولکر ترک نے منگل کے روز صدر جوبائیڈن کی طرف سےغزہ میں جنگ بندی منصوبے کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔ ان کا اس موقع پر کہنا تھا غزہ کی صورت حال انسانی تباہی سے بھی آگے کی ہے۔ وہ ملائیشیا کے دارالحکومت کوالالمپور میں ایک پریس کانفرس سے خطاب کر رہے تھے۔

انسانی حقوق کے سربراہ نے کہا ' جنگی اصول ، اقدار اور معیارات کو غزہ کی جنگ میں ظالمانہ طریقے سے کچلا گیا ہے۔ اس لیے جو انیشیٹو بھی اس دشمنی کے خاتمے کی طرف رہنمائی کرے گا اس کا خیر مقدم کیا جائے گا۔ '

وولکر ترک نے کہا ' ہم یہ صرف امید کر سکتے ہیں کہ انسانی حالات کے حوالے سے کچھ حاصل کیا جا سکتا ہے۔ لیکن ہم اس سے زیادہ یہ بھی نہیں جانتے اسے ہمیں کیسے بیان کرنا چاہیے۔ کیونکہ یہ صورت حال تباہی سے کہیں بڑھ کر ہو چکی ہے۔'

ایک سوال کے جواب میں وولکر ترک نے کہا' سلامتی کونسل؛ میں جوبائیڈن کے جنگ بندی منصوبے کو اختیار کرنے کے لیے 9 ووٹوں کی ضرورت ہوگی۔ ان 9 ووٹوں کے مل جانے کے بعدامریکہ۔ چین، روس، فرانس ، برطانیہ میں سے بھی کسی کا ووٹ نہیں چایے ہو گا۔ البتہ یہ لازم ہوگا کہ یہ ملک ویٹو استعمال نہ کریں تاکہ جنگ بندی کی قرار دادمنظور ہو جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں