غزہ میں حماس کا کردار ختم کرنے کے لیے کام کررہے ہیں: امریکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک طرف حماس اور اسرائیل کے درمیان جنگ بندی کی کوششیں جاری ہیں اور دوسری طرف غزہ کی پٹی میں حماس کا انتظامی کردار ختم کرنے کے لیے امریکہ سرگرم عمل ہے۔

غزہ میں جنگ کے بعد کے بارے میں مسلسل بات چیت کے تناظر میں امریکی محکمہ خارجہ نے کہا ہےکہ وہ غزہ کی حکمرانی کا مستقبل فلسطینی اتھارٹی کے پاس دیکھتے ہیں۔ محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ واشنگٹن اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کام کر رہا ہے کہ غزہ کی پٹی میں آئندہ طے پانے والے نظم ونسق میں حماس کا کوئی کردار نہ ہو۔

وزارت خارجہ کے ترجمان نے واشنگٹن میں العربیہ/الحاث کے نامہ نگار کو بتایا کہ فلسطینی اتھارٹی میں اصلاحات اور اس کا احیاء فلسطینیوں اور اسرائیل کے مفاد میں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ "ہم اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کام کر رہے ہیں کہ حماس کا دوبارہ غزہ پر حکمرانی میں کوئی کردار نہ ہو"۔

اسرائیلی وزیر دفاع یوآو گیلنٹ نے اتوار کو کہا تھا کہ اسرائیل جنگ کے خاتمے کے عمل کے دوران کسی بھی مرحلے پر حماس کی غزہ پٹی پر حکمرانی جاری رکھنے کو قبول نہیں کرے گا اور اسرائیل حماس کے متبادل تلاش کر رہا ہے۔

گیلنٹ نے ایک بیان میں مزید کہا کہ "جب ہم اپنی اہم فوجی کارروائیاں کر رہے ہیں۔ دفاعی اسٹیبلشمنٹ اسی وقت حماس کے متبادل حکمران ادارے کا مطالعہ کر رہی ہے"۔

انہوں نے مزید کہا کہ "ہم (غزہ کی پٹی میں) علاقوں کو الگ تھلگ کر دیں گے۔ ان علاقوں سے حماس کے اراکین کو نکال دیں گے اور ایسی فورسز کو تعینات کریں گے جو ایک متبادل حکومت کی تشکیل کو ممکن بنائے۔

اس سے قبل سامنے آنے والی بعض غیر مصدقہ اطلاعات میں بتایا گیا تھا کہ واشنگٹن ایک نئی فلسطینی اتھارٹی کے قیام کے لیے دباؤ ڈال رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں