میکسیکو: پہلی خاتون صدر کےانتخاب کے ساتھ ہی خاتون مئیر کا قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

میکسیکیو میں پہلی منتخب ہونے والی خاتون صدرکی جیت کے بعد 24 گھنٹوں کے اندر اندر مغربی میکسیکو کے ایک قصبے کی مئیر کو قتل کر دیا گیا ہے۔

مغربی میکسیکو کے قصبے کی مئیریولنڈا سانچیز فیگوورا 2021 میں مئیر منتخب ہوئی تھیں۔ میکسیکو کی علاقائی وزارت داخلہ نے اس بہیمانہ واقعے کی مذمت کی ہے۔ ریاستی حکومت کوٹیجا کی میونسپل مئیر یولنڈا سانچیز فیگروا کے قتل کی مذمت کی ہے۔

یہ واقعہ شین بام کی بطور صدر زبردست جیت کے محض چوبیس گھنٹے کے اندر اندرپیش آیا ہے ۔ مئیر کو ایک عوامی سڑک پرجاتے ہوئے گولی مار کر ہلاک کیا گیا ہے۔ تاہم میکسیکو حکام نے قتل کے اس واقعے کی تفصیلات ابھی جاری نہیں کی ہیں۔

مقتولہ مئیر کواس سےقبل گذشتہ سال ماہ ستمبر میں ریاست جالیسکو کے شہر گوا ڈالا جارا میں اغوا کر لیا گیا تھا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اغوا کاروں کا تعلق اغواکاروں کے ایک گروپ سے تھا جو مافیا کی طرح کام کرتا ہے۔ تاہم بعد ازاں ان کی رہائی ہو گئی تھی۔

جالیسکو کارٹیل نے مبینہ طور پر میونسپلٹی پولیس فورس کی طرف سے اپنے دھندے میں پیدا کی جانے والی مشکلات کے باعث مئیر کو دھمکانے کے لیے اغوا کیا تھا۔

میکسیکو اپنے سیاحتی مقامات اور ترقی پذیر زرعی برآمدات کی وجہ سے مشہور ہے، لیکن بھتہ خوری اور منشیات سمگلروں کے علاوہ خطرناک مافیاز کی بھی شہرت رکھتا ہے۔

میکسیکو کی ریاستی حکومت نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ' ایکس ' پر کہا ہے ریاست کوٹیجا کے میونسپل صدر یو لانڈا سانچیز فیگوئرا کے قتل کی مذمت کرتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں