اسرائیلی سپریم کورٹ کے سابق صدر بین الاقوامی عدالت انصاف کے غزہ پینل سے مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کی سپریم کورٹ کے سابق صدر اہارون باراک نے بین الاقوامی عدالت انصاف پینل کے ایڈہاک جج کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ یہ پینل غزہ جنگ میں اسرائیل کے خلاف نسل کشی کے الزامات پر مبنی مقدمہ کی سماعت کر رہا ہے۔

چار جون کو استعفےٰ پر مبنی ایک خط میں 87 سالہ باراک نے ذاتی اور خاندانی وجوہات کو اپنے فیصلے کی بنیاد قرار دیا۔ ان کا یہ خط اسرائیلی میڈیا نے شائع کیا۔

بین الاقوامی عدالت انصاف کے قوانین کے تحت جس ریاست کی قومیت کا جج پہلے سے ہی بنچ میں شامل نہ ہو، وہ اپنے کیس کی کارروائی میں بیٹھنے کے لیے ایڈہاک جج کا انتخاب کر سکتی ہے۔ فوری طور پر یہ واضح نہیں ہو سکا کہ اسرائیل باراک کی جگہ کس کو مقرر کر سکتا ہے۔

دی ہیگ میں باراک کی خدمات کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ایک بیان میں اسرائیلی صدر اسحاق ہرتصوغ نے کہا: "ہم اسرائیل اور اسرائیل کی دفاعی افواج کے خلاف برائی، منافقت اور توہین کے خلاف ثابت قدم رہیں گے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں