مصر میں لاپتا سعودی شہری کی لاش برآمد، خاندان کی تصدیق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں لاپتہ ہونے والے سعودی شہری ھتان شطا کے بھائی ہانی شطا نے بتایا ہے کہ ان کے بھائی کی لاش مل گئی ہے۔

مصری وزارت داخلہ کے ایک بیان میں اس بات کی تصدیق کی گئی ہے کہ لاپتہ سعودی شہری کی تلاش کی کوششوں کے نتیجے میں اس کی لاش ملی۔

تحقیقات اور طبی معائنے سے معلوم ہوا کہ اس کی موت اس کی خرابی صحت کے نتیجے میں ہوئی جب کہ اس میں کوئی مجرمانہ اقدام شبہ نہیں ہوا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ہتان کی موت ان کی صحت کی خرابی کا نتیجہ ہے۔اس کے مطابق اس حوالے سے قانونی اقدامات کیے گئے۔ متوفی کے بھائی اور سعودی سفارت خانے کو بھی مصری سکیورٹی حکام کی طرف سے تمام تفصیلات سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔

قبل ازیں ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے ذرائع نے کہا تھا کہ مصری حکام کو اس کی لاش ایک گلی میں ملی۔ اس کا معائنہ کیا۔ پھر پتہ چلا کہ اس کی موت کسی مجرمانہ کارروائی کا نتیجہ نہیں بلکہ قدرتی طور پر اس کی موت ہوئی ہے۔

حالیہ واقعے کے حوالے سے انہی تفصیلات کے تناظر میں ذرائع نے بتایا کہ سعودی شہری ہتان شطا نے قاہرہ کے مشرق میں الرحاب کے علاقے میں اپنا اپارٹمنٹ اور تمام سامان چھوڑ کرغائب ہوگیا۔ اس سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی مگر کوئی پتا نہیں چلا۔ جب کہ مصری سکیورٹی سروسز نے شہری کے ڈیٹا اور تصویر کے ساتھ ایک سرکلر جاری کیا اور اسے تمام گورنریوں اور سکیورٹی ڈائریکٹوریٹ کو اس کی تلاش کے لیے بھیج دیا۔

حکام نے التجمع ایریا کے قریب شہروں میں ہتان کو تلاش کیا۔ 6 اکتوبر اور شیخ زید کے علاقے میں بھی تلاشی لی اور مصری شہریوں سے کہا کہ اگر وہ اس حوالے سے پولیس کی مدد کریں۔

قاہرہ میں سعودی سفارت خانے نے ایک سرکاری بیان میں اعلان کیا گیا ہے قاہرہ میں سعودی شہری کے لاپتہ ہونے کے پہلے دن سے ہی اس نے مصر میں سرکاری اور سکیورٹی حکام کے ساتھ رابطے شروع کر دیے تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ نگرانی کے کیمروں میں سعودی شہری کو اپنے گھر سے نکلتے ہوئے ریکارڈ کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ شہری کے اہل خانہ اور سکیورٹی سروسز سے رابطہ کر رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں