حج سیزن

12 لاکھ عازمین حج مناسک کی ادائی کے لیے سعودی عرب پہنچ چکے ہیں: وزیر حج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے وزیر حج وعمرہ ڈاکٹر توفیق الربیعہ کا کہنا ہے کہ مملکت میں اب تک 12 لاکھ عازمین حج کی ادائی کے لیے پہنچ چکے ہیں۔

سعودی وزیر نے خصوصی پریس کانفرنس میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ سعودی عرب نے جعلی حج آپریشنز کے خطرات سے آگاہی کے لیے بین الاقوامی مہم کا آغاز کر دیا ہے۔

توفیق الربیعہ نے زور دیا کہ عازمین حج حکام کے ساتھ تعاون کریں اور ضوابط کی پابندی کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ ضیوف الرحمن کی سہولت کے لیے ہر ممکن سہولیات فراہم کی گئی ہیں۔

عازمین حج کی مجموعی صحت کے حوالے سے الربیعہ کا کہنا تھا کہ امور صحت کے ادارے بہترین طریقے سے خدمات انجام دے رہے ہیں مجموعی طورپر عازمین کی صحت بہتر ہے تمام معاملات بہتر طورپر انجام پارہے ہیں۔

وزیر حج کا مزید کہنا تھا کہ رواں برس حج امور کو بہتر انداز میں مکمل کرنے کے لیے 50 سے زائد سرکاری اداروں کے ساتھ اشتراک عمل کیا گیا جبکہ 11 ممالک کا دورہ کر کے وہاں حج امور کے حوالے سے معاملات طے کیے گئے تھے۔

انکا کہنا تھا کہ 126 ممالک کے شہریوں کو یہ سہولت فراہم کی گئی ہے کہ وہ بغیر کسی ایجنٹ یا سیاحتی ادارے کے ڈیجیٹل پورٹل اور پلیٹ فارم پرحج کے لیے درخواست جمع کرا سکتے ہیں۔

امسال وادی منی میں 11 نئی عمارتوں کا اضافہ کیا گیا ہے جہاں 37 ہزار حجاج کو قیام کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ علاوہ ازیں دنیا کا سب سے بڑا کولنگ اسٹیشن بھی نصب کیا گیا ہے جس سے مشاعر مقدسہ میں ہوا کو قدرے ٹھنڈا کرنا ممکن ہو گا۔ کولنگ اسٹیشن کے ذریعے پانی کی پھوار ہوا میں پھیلے گی جس سے گرمی کی شدت میں کمی واقع ہو گی۔

وزیر حج نے توقع ظاہر کی کہ امسال دو لاکھ 50 ہزار سے زائد عازمین ’مکہ روٹ‘ منصوبے سے فائدہ حاصل کریں گے۔ منصوبے کا مقصد عازمین کو بہتر سفری سہولت فراہم کرنا ہے۔

امسال ایام حج کے لیے 10 ہزار سے زائد مرد و خواتین رضا کاروں کی خدمات حاصل کی گئی ہے جبکہ ایک لاکھ 20 ہزار سے زائد کارکنوں حجاج کی خدمت کے لیے عملی تربیت فراہم کی گئی ہے جس کے تحت انہیں مختلف زبانوں کے روز مرہ میں استعمال ہونے والی الفاظ بھی سیکھائے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں