مسک نے ’’ ایکس‘‘ پر فحش مواد کی اجازت کیوں دی؟ فیصلے پر تنازع کھڑا ہوگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

سماجی روابط کی ویب سائٹ ’’ ایکس‘‘ نے دو روز قبل اعلان کردیا ہے کہ اب وہ باضابطہ طور پر کسی بھی جنسی یا فحش مواد کو اپنے پلیٹ فارم پر شائع کرنے کی اجازت دیتی ہے۔ اس طرح کی ویڈیوز، تصاویر، یا اشتہارات پہلے ہی ’’ ایکس‘‘ پر پھیل چکی ہیں۔ ایکس یا سابق ٹوئٹر کے حوالے سے اس اقدام نے بڑے پیمانے پر تنازع کھڑا کردیا ہے۔

لیکن "X" پالیسی کے مطابق اس بار نیا کیا ہے، وہ یہ ہے کہ کسی بھی پوسٹ پر فحش مواد کے خلاف وارننگ کے طور پر "بالغوں کا مواد" کا فقرہ ظاہر ہوگا۔ اس لیے دلچسپی رکھنے والوں کو پوسٹ دیکھنے کے لیے اس پر کلک کرنا ہوگا۔

وہ صارفین جن کی عمر 18 سال سے کم ہے یا جنہوں نے اپنی تاریخ پیدائش "ایکس" کو فراہم نہیں کی ہے وہ بھی اس مواد کو نہیں دیکھ سکیں گے۔ واشنگٹن پوسٹ نے اس حوالے سے مزید بتایا کہ جو افراد حساس مواد نہیں دکھانا چاہتے وہ اپنی سیٹنگ کو اسی کے مطابق ایڈجسٹ کر سکتے ہیں۔

ایپ تبدیل نہ کریں

دریں اثنا ایکس نے تبدیلیوں پر تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا۔ کمپنی کے سیکیورٹی اکاؤنٹ نے منگل کو ایک پوسٹ میں کہا کہ وہ اپنے کئی ہیلپ پیجز کو اپ ڈیٹ کرنے اور زیادہ واضح بنانے میں مصروف عمل ہے۔ ایکس کی جانب سے یہ بھی کہا گیا کہ ان اپ ڈیٹس کا مقصد ایپلی کیشن کو تبدیل کرنا نہیں ہے بلکہ اس کے قوانین کو سب کے لیے واضح کرنا ہے۔

کچھ کنٹرولز میں اضافہ

اس تناظر میں مشاورتی فرم فور کارنرز پبلک افیئرز کے ایک پارٹنر اور ٹویٹر، فیس بک اور گوگل میں سیاسی مواصلات کے ایک سابق اہلکار نو ویکسلر نے کہا ہے کہ زیادہ تر پلیٹ فارمز بالغوں کے مواد کے بارے میں مبہم رہنما اصولوں کو برقرار رکھنے کو ترجیح دیتے ہیں یا اس موضوع سے مکمل طور پر گریز کرتے ہیں۔ لہذا ’’ایکس‘‘ کی طرف سے جاری کردہ اس وضاحت کو اس کے حق میں سمجھا جانا چاہیے نا کہ اس کے خلاف۔ انہوں نے مزید کہا "X‘‘ کو اب بھی غیر قانونی مواد جیسے بچوں کے جنسی استحصال کے مواد اور ناپسندیدہ فحش مواد کے خلاف کچھ کنٹرول بڑھانا چاہیے۔

پالیسی کی تفصیلات

باضابطہ ویب سائٹ پر پوسٹ کی گئی ’’X‘‘ کی پالیسی کے مطابق ایکس یا سابق ٹویٹر پر رضامندی سے تیار کردہ فحش اور بالغ مواد کی دیگر شکلوں کی اجازت ہے بشرطیکہ ایسے میڈیا کو حساس کے طور پر نشان زد کیا گیا ہو۔

بالغوں کے لیے مواد

واضح رہے "X" پلیٹ فارم نے گزشتہ منگل کو اپنی تازہ ترین ہدایات میں بالغوں کے مواد کے عنوان سے اپنے صفحہ پر کہا تھا کہ اس کا خیال ہے کہ صارفین کو اس وقت تک جنسی مواد بنانے، شائع کرنے اور ظاہر کرنے کے قابل ہونا چاہیے جب تک کہ یہ مواد اتفاق رائے سے تیار کیا گیا ہو۔

ایکس نے یہ بھی کہا تھا کہ اسی طرح کا مواد ایسے بچوں یا بالغ صارفین کے سامنے نہیں آئے گا جو اسے براؤز نہیں کرنا چاہتے ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ اس سے کسی کو نقصان نہیں پہنچے گا یا کسی پر مسلط نہیں کیا جارہا۔

واضح رہے 2022 میں "X" کے حصول کے بعد سے ایلون مسک نے اسے آزادی اظہار کی جگہ بنانے کی کوشش کی ہے۔ اس کے لیے مواد کی نگرانی کو کم کرنے یا کچھ انتہا پسندانہ رائے کے لیے جگہ بھی بنائی گئی۔ یہ پالیسی بعض اوقات جعلی مواد کو فروغ دینے والے بہت سے اکاؤنٹس کے پھیلاؤ کا باعث بھی بنتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں