ریاض: غیر قانونی طور پر جنگلی جانور رکھنے اور ان کی نمائش پر چار افراد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں ماحولیاتی تحفظ کی اسپیشل فورس نے ’نیشنل سینٹر فار وائلڈ لائف ڈیولپمنٹ‘ کے ساتھ مل کر شامی، عراقی اور بنگلہ دیشی قومیتوں کے 3 غیر ملکی باشندوں اور ایک مقامی شہری کو ماحولیاتی نظام کی خلاف ورزی کرتے ہوئے 179 جنگلی جانداروں بشمول شکاری اور خطرے سے دوچار جانوروں کو رکھنے اور ان کی نمائش پر گرفتار کیا ہے۔ ریاض کے علاقے میں رکھے گئے ان جانداروں کو ماحولیاتی نظام اور اس کی مصنوعات اور مشتقات کے تحفظ کے انتظامی ضوابط کی خلاف ورزی قرار دیا گیا ہے۔

فورسز نے وضاحت کی کہ انہوں نے چاروں ملزمان کے خلاف قانونی اقدامات کیے ہیں اور ان جانداروں کو نیشنل سینٹر فار وائلڈ لائف ڈویلپمنٹ کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

ماحولیاتی تحفظ فورس کا کہنا ہے کہ خطرے سے دوچار جنگلی حیات کی نمائش کرنے کی سزا 10 سال تک قید یا 30 ملین تک جرمانہ یا ان دو سزائیں ہوسکتی ہیں۔

اس نے شہریوں پر غیر ملکی تارکین وطن پر زور دیا ہے کہ وہ جنگلی جانداروں کی ضوابط اور ہدایات کی خلاف ورزی یا اس حوالے سے کسی غیرقانونی سرگرمی کی نشاندہی پر مکہ مکرمہ، ریاض، اور الشرقیہ کے علاقوں میں 911ہیلپ لائن اور ملک کے دیگر علاقوں میں 999 اور 996 پر مجاز حکام کو اطلاع دیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں