سعودی عرب میں جعلی حج سرگرمیوں میں ملوث کمپنیوں کی شامت،140 کمپنیاں سیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی حکومت اور سکیورٹی اداروں نے جعلی حج اسکیموں اور مہمات چلانےوالوں کے گرد شنکجہ مزید سخت کردیا ہے۔ اس حوالے سے کئی غیرملکی نوسربازوں کی گرفتاری کے ساتھ ساتھ کئی کمپنیوں کو سیل کردیا گیا ہے۔

سعودی عرب میں پبلک سکیورٹی کے ڈائریکٹر لیفٹیننٹ جنرل محمد البسامی نے کہا ہے کہ پبلک سکیورٹی اس سال حج سیزن کے دوران 140 سے زائد جعلی حج کمپنیوں کو سیل کرکے ان کے ذمہ داروں کو گرفتار کرنے میں کامیاب رہی ہے۔

سعودی عرب میں پبلک سکیورٹی کے ڈائریکٹر نے اس بات کی تصدیق کی کہ سکیورٹی فورسز ہر سرگرمی سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں جو سکیورٹی اور نظم و ضبط میں خلل ڈالتی ہیں۔ سکیورٹی ادارے ہمہ وقت الرٹ ہیں اور ضیوف الرحمان کو کسی بھی طرح سے متاثر کرنے اوران کی مناسک کی ادائی میں خلل ڈالنے کی کسی بھی کوشش کو ناکام بنانے کےلیے پرعزم ہے۔

انہوں نے کہا کہ حج سیزن کے دوران کی سیکیورٹی کو متاثر کرنے کے لیے 64 ہزار افراد کو گرفتار کیا گیا جنہوں نے غیر قانونی عازمین کو مقدس مقامات تک پہنچانے کی کوشش کی تھی۔

سعودی عرب نے حال ہی میں جعلی حج مہمات کے خطرے سے آگاہی کے لیے ایک بین الاقوامی مہم کا آغاز کیا تھا۔ سعودی عرب کے وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے اس سال کے امور حج سے متعلق پریس کانفرنس انکشاف کیا کہ مملکت جعلی حج کی سرگرمیوں کو صفر تک لانے کے لیے پرعزم ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں