مصر کا اسرائیل اور حماس سے غزہ میں جنگ بندی کے معاہدے کو مکمل کرنے پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر نے سلامتی کونسل کی جانب سے غزہ کی پٹی میں جامع اور مستقل جنگ بندی تک پہنچنے کے لیے لیے معاہدے کی حمایت کی قرارداد کا خیرمقدم کیا ہے۔

مصری وزارت خارجہ کی طرف سے پیر کی شام جاری کردہ ایک بیان میں قاہرہ نے سلامتی کونسل کی طرف سے جاری کردہ قرارداد اور اس میں قیدیوں اور زیر حراست افراد کے تبادلے، غزہ سے اسرائیلی افواج کے مکمل انخلاء ، بے گھر فلسطینیوں کی بحفاظت واپسی اور جنگ زدہ فلسطینیوں کو امداد کی بلا تعطل فراہمی کی قرارداد کا خیرمقدم کیا۔

مصر نے اسرائیل کو بین الاقوامی قانون کے مطابق اپنی ذمہ داریوں کی تعمیل کرنے کی اہمیت اور غزہ کی پٹی کے خلاف جاری جنگ اور اس کی وجہ سے ہونے والی ہلاکتوں اور تباہی کو روکنے کے لیے مطالبے کی دہرایا۔

مصرنے حماس اور اسرائیل دونوں پر زور دیا کہ وہ غزہ میں جاری جنگ روکیں اور سلامتی کونسل کی قرارداد کی روشنی میں جنگ بندی معاہدے کی تجاویز پر عمل درآمد شروع کریں۔

مصر نے دو ریاستی حل کو عملی جامہ پہنانے کے لیے سیاسی افق تلاش کرنے، اس کے لیے بین الاقوامی سطح پر سنجیدہ اقدامات کی ضرورت رپو توجہ دلائی۔ مصر کا کہنا تھاکہ تنازعے کی جڑکو ختم کرنے، خطے میں استحکام اور بقائے باہمی کی بنیادوں کی حمایت اور قیام امن کی واحد ضمانت ہے1967ء کی سرحدوں اور مشرقی بیت المقدس پر مشتمل ایک آزاد فلسطینی ریاست کا قیام ناگزیر ہے۔

پیر کو امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کے ساتھ ملاقات کے دوران مصری صدر عبدالفتاح السیسی نے انسانی امداد کے نفاذ کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے لیے مربوط بین الاقوامی کوششوں کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے غزہ کی پٹی پر جنگ کے خاتمے، اس کی روک تھام۔ جنگ کو پھیلنے سے روکنے اور دو ریاستی حل کو نافذ کرنے میں آگے بڑھنے پر زور دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں