.

اسرائیلی وزیر اعظم نے قبل از وقت انتخابات کا اعلان کر دیا

'اتحادیوں کے درمیان بجٹ پر اتفاق رائے قائم نہیں رہا'

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
اسرائیل کے وزیر اعظم بنجمن نیتن ياہو نے ملک میں قبل از وقت عام انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔ یہ انتخابات جنوری 2013 میں کروائے جا سکتے ہیں جو کہ اسرائیل میں انتخابات کے مقررہ وقت سے نو [9] ماہ قبل ہے۔

منگل کی شب ایک مختصر نیوز کانفرنس کو نیتن یاہو نے بتایا کہ ایک سو بیس ارکان پر مشتمل کنیسٹ [اسرائیلی پارلیمان] کے لیے نئے انتخابات ’جلد سے جلد‘ کرائے جائیں گے۔ اسرائیلی وزیراعظم کی دائیں بازو کی اتحادی حکومت سنہ دو ہزار نو سے اقتدار میں ہے۔

بنیامن نیتن یاہو اسرائیلی عوام میں اب بھی بہت مقبول ہیں تاہم سالانہ بجٹ پر اپنے اتحادیوں کے درمیان اتفاق رائے قائم نہیں کر پائے ہیں۔

حکومت کی اتحادی جماعتیں فلاحی پروگراموں اور حکومت کی طرف سے دی جا رہی سہولیات میں کمی کے منصوبوں کو ماننے کے لیے تیار نہیں ہیں۔

نیتن یاہو نے کہا کہ انہوں نے وقت سے پہلے انتخابات کرانے کا فیصلہ اس لیے کیا کیونکہ اتحادیوں میں جھگڑے بڑھنے لگے ہیں اور اسی وجہ سے دو ہزار تیرہ کے لیے ایک ’ذمہ دارانہ بجٹ‘ منظور نہیں کرایا جا سکا ہے۔