.

الاخضر الابراہیمی کی شام میں امن فوج تعیناتی کی تجویز

یو این مندوب کا شامی بحران کے حل کی خاطر دورہ ایران

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
اقوام متحدہ اور عرب لیگ کے مشترکہ مندوب برائے شام الاخضر الابراہیمی شامی بحران کا حل تلاش کرنے کی کوششوں کے سلسلے میں آج تہران کا دورہ کر رہے ہیں۔ منصب سنبھالنے کے بعد یو این مندوب علاقے کا بحران کے حل کی خاطر خطے کا دوسرا دورہ ہے۔

برطانوی اخبار 'ٹیلی گراف' نے اپنی ایک حالیہ رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ الاخضر الابراہیمی نے شام میں تین ہزار اہلکاروں پر مشتمل 'امن فوج' تعینات کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے۔ اس بات کا امکان ہے کہ 'امن فوج' میں یورپی ملکوں سے بھی اہلکار شریک ہوں۔

اخبار کے مطابق مسٹر الابراہیمی اس ضمن میں ان ملکوں سے رابطہ کر رہے ہیں کہ جن کے فوجی لبنان اور اسرائیلی سرحد پر تعنیات 'یونیفل' امن دستوں میں شامل ہیں۔ یونیفل میں افرادی قوت فراہم کرنے والے یورپی ملکوں میں ایرلنڈا، جرمنی، فرانس، سپین اور اٹلی شامل ہیں۔

توقع ظاہر کی جا رہی ہے یہ ممالک شام میں امن فوج کی تشکیل میں قائدانہ کردار ادا کر سکتے ہیں کیونکہ اس مشن میں امریکا اور برطانیہ کی شرکت ناممکن نظر آتی ہے۔