.

جیش الحر نے بشار الاسد کے ہم شکل ہواباز کو گرفتار کر لیا

فوجی ہیلی کاپٹر بھی ہوابازوں کو نہ بچا سکے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی اپوزیشن پر مشتمل جیش الحر نے بشار الاسد کی حمایتی ائرفورس کے دو طیارے منگل کے روز مار گرائے۔ ملک کے شمالی شہر حلب کے مضافات میں مار گرائے جانے والے دونوں لڑاکا جہازوں کے ہواباز بھی جیش الحر نے گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔ ان میں ایک ہواباز اور شامی صدر بشار الاسد کی شکل میں حیران کن حد تک مماثلت ہے۔

جیش الحر کے سیاسی مشیر بشام الدادہ نے ترک خبر رساں ایجنسی 'اناطولیہ' کو ٹیلی فون پر بتایا کہ کیپٹن رینک کا ایک ہواباز کی شکل بشار الاسد سے انتہائی ملتی ہے۔

بسام الدادہ کے مطابق شامی ائرفورس کے 'مگ' لڑاکا جہاز کو الطعانہ کے علاقے میں جس توپ سے نشانہ بنایا گیا وہ دراصل جہاز گرانے میں استعمال نہیں ہوتی تاہم اس سے جہاز بہت نیچی پرواز کی صورت میں ہی گرایا جا سکتا ہے۔ جیش الحر کو مگ طیارہ نیچی پرواز کے دوران ہی مار گرانے میں کامیابی حاصل ہوئی۔

جیس الحر کے سیاسی مشیر نے شام میں موجود ارکان کے حوالے سے بتایا کہ دونوں ہوابازوں نے اپنے طیاروں کے نشانہ بننے کے بعد پیرا شوٹ کے ذریعے چھلانگ لگا دی۔ جس مقام پر وہ پیراشوٹ کے ذریعے گرے، وہاں فضا میں سرکاری فوج کے ہیلی کاپٹر پرواز کر رہے تھے تاکہ جیش الحر کے اہلکاروں کو ہوابازوں کے قریب نہ آنے دیا جائے، تاہم اس کڑی فضائی نگرانی کے باوجود جیش الحر کے جنگجوؤں نے شامی فضائیہ کے ہواباز گرفتار کر لئے۔