.

اماراتی نوجوان کو دبئی مال میں نیم عریاں ونڈو شاپنگ مہنگی پڑ گئی

نیم عریاں ویڈیو، تصاویر کی بڑے پیمانے پر اشاعت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
دبئی کے مشہور کاروباری مرکز میں ایک مقامی نوجوان کو نیم عریاں حالت میں گھومنے پھرنے کی پاداش میں جنرل پراسیکیوٹر کے حوالے کر دیا گیا۔

جنرل ڈائریکٹوریٹ آف کریمنل ایڈمنسٹریشن کے ڈائریکٹر کرنل خلیل ابراہم منصوری کے مطابق دبئی شاپنگ مال میں معمول کی مانیٹرنگ گشت پر مامور عملے نے گزشتہ روز بیس سالہ ایک اماراتی نوجوان کو اس وقت گرفتار کیا جب وہ مختصر جانگیا پہنے جدید شاپنگ مال میں آزادانہ گھوم رہا تھا۔

انہوں نے روزنامہ 'امارات الیوم' کو بتایا کہ اماراتی نوجوان کے ساتھ اس کے دو دوسرے ساتھی بھی تھے، جنہوں نے پیروں میں سلیپر پہن رکھے تھے اور انہوں نے روایتی عرب لباس سے جسم کے اوپر والے حصے کو ڈھانپ رکھا تھا جبکہ اپنا دھڑ چھپانے کے لئے انہوں نے لنگی باندھ رکھی تھی۔

دوران تفتیش معلوم ہوا کہ تینوں نے توجہ حاصل کرنے کے بے لباسی کا اندازہ اپنایا۔ کرنل منصوری کا کہنا تھا کہ گرفتار ہونے والے نوجوان نے ماضی میں کوئی ایسا خلاف واقعہ کام نہیں کیا تھا۔ وہ تینوں کسی نشے کے بھی عادی نہ تھے۔

انہوں نے بتایا کہ نمایاں ہونے کے خبط میں ان تینوں نوجوانوں کی قابل اعتراض تصاویر اور ویڈیو آن ہی آن میں موقع پر موجود افراد نے اپنے بلیک بیریز اور سمارٹ فونز کے ذریعے دنیا بھر میں نشر کر دیں۔



نیم عریاں ونڈو شاپنگ کرنے والے نوجوان نے حکام کے سامنے موقف اپنایا کہ وہ علی الصباح چار بجے مشرق وسطی کے مشہور مال میں ایسی حالت میں یہ سوچ کر آئے تھے کہ اس وقت مال میں زیادہ رش نہیں ہو گا۔