.

اسرائیل نے حماس کے الاقصی ٹی وی کی نشریات معطل کر دیں

صہیونی فوج کے حملوں میں 90 فلسطینی شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
اسرائیلی فوج نے غزہ کی حکمراں فلسطینی تنظیم حماس کے زیر انتظام ٹیلی ویژن چینل الاقصیٰ کا کنٹرول سنبھال لیا ہے اور اس کے ذریعے انتباہی بیانات نشر کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

الاقصیٰ ٹی وی نے سوموار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ اسرائیلی فوج اس کی نشریات میں مداخلت کررہی ہے اور اس کی نشریات کئی گھنٹے تک سکرین سے غائب رہی ہیں۔

اسرائیلی فوج کی ایک خاتون ترجمان نے کہا ہے کہ ''ہم نے انتباہی پیغامات جاری کرنے کے لیے چند گھنٹے تک حماس کے ٹیلی ویژن کا کنٹرول سنبھال لیا تھا'' لیکن غزہ شہر میں فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ انھوں نے فوج کی طرف سے جاری کردہ کوئی انتباہی بیانات نہیں دیکھے۔

واضح رہے کہ غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کے گذشتہ بدھ سے جاری حملوں میں اب تک نوے سے زیادہ فلسطینی شہید ہو چکے ہیں جبکہ غزہ سے اسرائیل کی جانب پانچ سو راکٹ فائر کیے گئے ہیں جس کے نتیجے میں تین یہودی ہلاک ہوئے ہیں۔

اتوار کو اسرائیلی فوج نے غزہ میں کئی گھنٹے تک حماس کے ریڈیو چینل کا بھی کنٹرول سنبھال لیا تھا۔ اسرائیلی فوج نے گذشتہ روز غزہ شہر میں میڈیا اداروں کی دو عمارتوں کو نشانہ بنایا تھا اور اس حملے میں آٹھ صحافی زخمی ہو گئے تھے۔ بعد میں اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں عالمی میڈیا اداروں سے وابستہ صحافیوں سے کہا تھا کہ وہ حماس کے اڈوں اور تنصیبات سے دور رہیں۔