.

جی سی سی ملکوں کے لئے شامی اپوزیشن کے مندوب نامزد

"شامی عوام کی مدد جاری رکھیں گے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
خلیج تعاون کونسل [جی سی سی] نے اپنے رکن ملکوں میں شامی اپوزیشن کے نمائندوں کو مندوب کا درجہ دینے پر اتفاق کیا ہے۔ جی سی سی کے جنرل سیکرٹری عبدالطیف الزیانی نے بتایا کہ چھے خلیجی ملکوں نے شامی اپوزیشن کے نمائندے مقرر کرنے کی درخواست منظور کر لی ہے۔



بیان کے مطابق شامی قومی اتحاد کے سیکرٹری جنرل مصطفیٰ الصباغ، انقلابی تنظیموں اور اپوزیشن کے تمام رہنماؤں کو جی سی سی کے فیصلے کے بارے میں آگاہ کر دیا گیا ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ جن چھے عرب ملکوں سے شامی کونسل نے اپنے نمائندوں کے تقرر کی درخواست کی تھی انہوں نے شامی اپوزیشن الائنس پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے اس کے نامزد نمائندوں کو اپنے ہاں متعین کرنے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے۔



عبدالطیف الزیابی کے مطابق شام کی موجودہ خراب صورت حال کے باوجود خلیج تعاون کونسل اپنے شامی بھائیوں کی مدد کو اپنا فرض سمجھتی ہے اور یہ مدد انقلاب کی تحریک کے منزل مقصود پر پہنچنے تک جاری رہے گی۔ انہوں نے شامی اپوزیشن قوتوں کے درمیان مفاہمت اور اتحاد کی ضرورت پر زور دیا۔



خیال رہے کہ شامی اپوزیشن کے مختلف دھڑوں نے طویل غور و خوض کے بعد 12 نومبر کو دوحہ میں ایک قومی اتحاد کی تشکیل دیا تھا۔ اسی اتحاد کو اس وقت شام کا نمائندہ اپوزیشن الائنس سمجھا جا رہا ہے۔ کئی ملکوں نے شامی قومی لائنس کو ملک کا نمائندہ اتحاد تسلیم کر لیا ہے۔ خلیجی ممالک کی جانب سے شامی اپوزیشن کو نمائندگی ملنے کے بعد سفارتکاری کے میدان میں اس کے راستے میں حائل مشکلات مزید کم ہو جائیں گی۔