.

مصری ججز کلب کا دستوری ریفرینڈم کی نگرانی سے انکار

ججوں پر کوئی اپنا فیصلہ مسلط نہیں کر سکتا: احمد الزند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مصر میں ججوں کے 90 فیصد کلبوں نے پندرہ دسمبر کے دستوری ریفرینڈم کی نگرانی کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ ججز کلب کے مرکزی صدر جسٹس احمد الزند نے ہم وطن برادر ججوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کوئی چیز زبردستی ججوں پر نہیں ٹھوس سکتے، اس کے باوجود عدلیہ کی بڑی اکثریت کا ریفرینڈم کے خلاف موقف قابل تحسین ہے۔

مصری ججز کلب نے ریفرینڈم کے بارے میں اپنا نقطہ نظر واضح کرنے کے لئے منگل کے روز قاہرہ میں نیوز کانفرنس کا انعقاد کیا۔ نیوز کانفرنس میں ججوں کے نمائندوں نے ملک کو درپیش موجودہ حالات میں میڈیا کے کردار کی اہمیت بیان کرتے ہوئے بتایا کہ جج اپنے موقف پر قائم ہیں۔

ملک کے مختلف علاقوں سے ججز کلبوں کے نمائندوں نے نیوز کانفرنس میں اپنے الگ الگ بیانات پڑھے جس میں انہوں نے یک زبان ہو کر پندرہ دسمبر کے آئینی ریفرینڈم کی نگرانی نہ کرنے کا عہد کیا۔ نیوز کانفرنس میں مصر شہروں اسکندریہ، کفر الشیخ، المنوفیہ اور المنصورہ کے ججز نمایاں تھے۔