.

اخوان ریفرینڈم میں دھاندلی کر رہی ہے اپوزیشن اتحاد کا الزام

ضابطے کی دانستہ خلاف ورزیوں پر تشویش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مصری اپوزیشن پر مشتمل نیشنل سالویشن فرنٹ نے صدر محمد مرسی کی جماعت اخوان المسلمون پر ہفتے کے روز نئے دستور سے متعلق ریفرینڈم کے پہلے مرحلے میں 'دھاندلی' کا الزام عائد کیا ہے۔ متنازعہ ریفرینڈم نے ملکی سیاست کو واضح طور پر تقسیم کر رکھا ہے۔

فرنٹ نے ایک بیان میں دستوری ریفرینڈم کے سلسلے میں جان بوجھ کر کی جانے والی ضابطے اور قاعدے کی خلاف ورزیوں پر سخت تشویش اور ناپسندیدگی کا اظہار کیا ہے۔ بیان کے مطابق پہلے مرحلے میں جن جن شہروں میں ریفرینڈم کا انعقاد کیا گیا، وہاں ہونے والی بے قاعدگیوں کو دیکھ کر ایسا معلوم ہوتا ہے کہ قاعدے اور ضابطے کو دانستہ بالائے طاق رکھا گیا تاکہ ریفرینڈم کا من پسند نتیجہ حاصل کیا جا سکے۔ سالویشن فرنٹ کا کہنا تھا کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ اخوان المسلمون کسی قومی دستور کے بارے میں ریفرینڈ٘م نہیں کرا رہی بلکہ وہ ملکی دستور کی جگہ پارٹی منشور پر لوگوں سے زبردستی 'منظور ہے' کے ٹھپے لگوا رہی ہے۔

نیشنل سالویشن فرنٹ نے دستوری ریفرینڈم کے متعلق تمام اداروں سے اپیل کی ہے وہ ووٹنگ کے تقدس کو برقرار رکھنے کی خاطر ریفرینڈم کی شفافیت کو یقینی بنائیں۔ مصری عوام کو بھی چاہئے کہ وہ بڑے پیمانے پر 'نامنظور' پر نشان لگا کر پارٹی منشور نما قومی دستور بنانے کی اخوانی کوششوں کو ناکام بنائیں۔