.

شامی وزیر داخلہ علاج کے لیے بیروت منتقل

محمد ابراہیم الشعار کی صحت کے بارے میں متضاد اطلاعات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
شام کے وزیر داخلہ محمد ابراہیم الشعار کو علاج کے لیے پڑوسی ملک لبنان کے دارالحکومت بیروت منتقل کر دیا گیا ہے۔وہ گذشتہ بدھ کو دمشق میں وزارت داخلہ پر بم حملے میں شدید زخمی ہو گئے تھَے۔

لبنانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق محمد الشعار کو بیروت میں امریکی یونیورسٹی اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔تاہم ان کی حالت کے بارے میں کوئی اطلاع نہیں ہے۔ بعض شامی باغیوں کا کہنا ہے کہ وزیر داخلہ گذشتہ بدھ کو وزارت داخلہ کے باہر کاربم دھماکے میں زخمی ہو گئے تھے۔

شام کے ایک جہادی گروپ النصرت محاذ نے اس بم حملے کی ذمے داری قبول کی تھی۔

الننصرۃ محاذ کے مطابق پہلے دو خودکش بمباروں نے عمارت کے اندر داخل ہو کر دھماکے کیے تھے اور اس کے بعد بارود سے بھری دو کاروں کو وہاں دھماکے سے اڑا دیا گیا تھا۔ان میں سے ایک کار وزیر داخلہ محمد ابراہیم الشعار کے دفتر کے نزدیک کھڑی کی گئی تھی۔ دھماکے کے نتیجے میں ان کے دفتر کی سیلنگ ان پر آگری تھِی جس سے وہ زخمی ہوگئے تھے۔

لندن میں قائم شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کی اطلاع کے مطابق بم حملے میں ایک رکن پارلیمان سمیت نو افراد ہلاک اور بیس زخمی ہو گئے تھے۔شام کی سرکاری خبر رسان ایجنسی 'سانا' نے پانچ افراد کی ہلاک اور تئیس کے زخمی ہونے کی اطلاع دی تھیں۔