.

یرموک مہاجر کیمپ کے قریب شامی فوج اور جیش الحر میں تصادم

اسٹیل فیکٹری کراسنگ کے راستے یرموک سے فلسطینیوں کی لبنان ہجرت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
شامی میڈیا سینٹر کے مطابق منگل کی شب دمشق کے جنوب میں یرموک مہاجر کیمپ کے قریب التضامن کالونی سرکاری فوج اور جیش الحر کے جنگجوؤں کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں جس کے بعد شامی توپخانے نے علاقے پر شدید گولا باری کی۔

منگل کے روز حماہ شہر سے سرکاری فوج نے متعدد ٹھکانے اور شہر میں لگائی گئی رکاوٹیں ختم کر دیں۔ اس سے قبل اپوزیشن کے جنگجوؤں سے سرکاری فوج کی شدید لڑائی ہوئی جو انسانی حقوق کی شامی آبزرویٹری کے بہ قول 48 گھنٹے تک جاری رہی۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' نے شام کے مختلف علاقوں میں ہونے والی پرتشدد کارروائیوں میں میں 98 افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاع دی تھی۔

دیر الزور میں پولیٹیکل سیکیورٹی ہیڈکوارٹرز کے محاصرے کی اطلاع ملتے ہی فوجی انقلاب کونسل نے بھی دیر الزور پر کنڑول حاصل کرنے کے لئے بڑی کارروائی کا اعلان کر دیا۔

ادھر شامی سرحد پر مشرقی لبنان میں واقع سٹیل فیکٹری کراسنگ پر یرموک کیمپ سے محفوظ مقام پر منتقل ہونے والے فلسطینیوں کی بڑی تعداد جمع ہو رہی ہے۔ یرموک کیمپ پر شامی فضائیہ کی بمباری اور ٹینکوں سے گولا باری کے بعد علاقے سے فلسطینی مہاجر نقل مکانی پر مجبور ہیں۔