.

مصرساحلی شہر میں گرفتار اسرائیلی جاسوس سے پوچھ گچھ

مشتبہ جاسوس چاردن کے ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مصر کے پراسیکیوٹرز نے ساحلی شہر نویبہ میں گرفتار کیے گئے ایک اسرائیلی نوجوان سے جاسوسی کے الزام میں تحقیقات شروع کردی ہے۔

ذرائع کے مطابق ''ایک اسرائیلی کو مصر اور اسرائیل کے درمیان واقع سرحدی علاقے طابا میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے کے الزام میں سوموار کو گرفتار کیا گیا تھا۔آج منگل کو اسے چار دن کے ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے''۔

مصر کے سرکاری ذرائع نے بتایا ہے کہ یہ مشتبہ شخص طابا کے نزدیک ایک پہاڑی علاقے سے اسرائیل سے غیرقانونی طور پر مصر کی حدود میں داخل ہوا تھا اور وہاں اسے پکڑلیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے مصر کے میڈیا نے ستمبر 2012ء میں اسرائیل کی خفیہ ایجنسی موساد کے کارندوں کے سینا کے علاقے میں داخل ہونے کی اطلاع دی تھی اور انھوں نے وہاں ایک جہادی تنظیم جماعت انصار بیت المقدس کے ایک رکن بہیم عودہ بریقات کو قتل کردیا تھا۔

مصری روزنامے الاہرام کی ایک رپورٹ کے مطابق ابراہیم کو قتل کرنے کے لیے موساد نے سینا سے تعلق رکھنے والے چار بدوؤں کی خدمات حاصل کی تھیں۔

اکتوبر 2011ء میں بھی ایک امریکی اسرائیلی شہری کو قاہرہ میں جاسوسی کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور اس پر مصری شہریوں میں فرقہ واریت کا بیج بونے کا الزام عاید کیا گیا تھا۔اس شخص نے ان الزامات کی تردید کی تھی اوربعد میں اسے مصر نے اسرائیل کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے کے سمجھوتے کے تحت رہا کردیا گیا تھا۔