.

عراق میں عرب بہاریہ کا اعادہ نوشتہ دیوار ہے

مقتدی الصدر کی وارننگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
عراق میں اہل تشیع کے ایک سخت گیر رہنُماء مقتدی الصدر نے وزیر اعظم نوری المالکی کو خبردار کیا ہے کہ ملک عرب بہاریہ کی طرز تبدیلی نوشتہ دیوار ہے۔ مقتدی الصدر نے نوری المالکی کی پالیسیوں پر کڑی تنقید کرتے ہوئے ان کے استعفے کا مطالبہ کیا ہے۔

شیعہ رہنما نے نوری المالکی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سیاسی قیادت کو عراق کی تعمیر کا موقع دے۔ انہوں نے کہا کہ عراق کی موجودہ حکومت تمام فیصلے اپنے طور پر کر رہی ہے۔ بغداد، عراق کے سیاسی روڈ میپ میں شامل دوسری جماعتوں اور کابینہ کے تمام وزراء کو آن بورڈ نہیں لے رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عراقی حکومت شہریوں کو سہولیات دے۔ چند دن پہلے ملک میں شدید بارشوں سے پیدا ہونے والی صورتحال حکومت کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے، جس میں حکمران، عوام کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں بری طرح ناکام رہے ہیں۔

مقتدی الصدر نے رمادی، صلاح الدین، دیالی اور نینوی میں پرامن مظاہروں کی حمایت کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مظاہروں کو فرقہ وارنہ نعروں سے پاک رکھا جائے۔