.

مصرشمالی سینا میں امریکی ساختہ ٹینک شکن میزائل برآمد

لیبیا سے اسمگل شدہ اسلحہ مصر پہنچائے جانے کی اطلاعات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مصر کی سکیورٹی فورسز نے شمالی سیناء میں العریش شہر کے نزدیک ایک چھاپہ مار کارروائی کے دوران چھے امریکی ساختہ ٹینک شکن میزائل برآمد کر لیے ہیں۔

سکیورٹی حکام نے بتایا ہے کہ پولیس کو مقامی بدوؤں نے شمالی سینا کے شہر العریش کے نواح میں واقع صحرائی علاقے میں امریکی ساختہ میزائل موجود ہونے کی اطلاع دی تھی۔ان میزائلوں کو ایک گڑھا کھود کر چھپایا گیا تھا اور سکیورٹی اہلکاروں نے انھیں جمعہ کی صبح برآمد کر لیا ہے۔

مصر کے ایک سکیورٹی ذریعے کے مطابق یہ میزائل ممکنہ طور پر زیرزمین سرنگوں کے ذریعے غزہ کی پٹی منتقل کیے جانے تھے۔ ٹینک شکن اور طیارہ شکن میزائل پچھہتر سینٹی میٹر لمبے ہیں اور وہ دو کلومیٹر تک مار کرسکتے ہیں۔

مصری حکام کے مطابق یہ میزائل ممکنہ طور پر لیبیا سے شمالی سیناء کے علاقے میں منتقل کیے گئے تھے۔فوری طور پر ان میزائلوں کو چھپانے والے افراد کی گرفتاریوں کے بارے میں کوئی اطلاع نہیں ہے۔

اسرائیل اس سے پہلے یہ الزام عاید کرچکا ہے کہ لیبیا سے اسمگل شدہ ہرقسم کے ہتھیار مصر کے راستے سے حماس کے زیرنگیں غزہ میں پہنچائے جارہے ہیں۔واضح رہے کہ لیبیا کے سابق صدر معمر قذافی کے خلاف مسلح عوامی بغاوت کے دوران بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود اسمگل کرلیا گیا تھا اور مغربی ممالک نے تب ان خدشات کا اظہار کیا تھا کہ یہ اسلحہ القاعدہ یا اس کی حامی تنظیموں کے ہاتھ لگ سکتا ہے۔

اسرائیل نے سن 2006ء سے غزہ کی پٹی کا محاصرہ کررکھا ہے۔اس دوران نے اس نے دومرتبہ غزہ پر جنگ مسلط کی ہے۔حماس اور دوسری مزاحمتی تنظیمیں اسرائیلی جارحیت کا مقابلہ کرنے کے لیے مبینہ طور پرعلاقے میں کام کرنے والےاسلحہ ڈیلروں سے رجوع کرتی ہیں اور وہ مصر اور غزہ کے درمیان سرحد پر آرپار بنی سرنگوں کے ذریعے انھیں گولہ بارود پہنچاتے رہتے ہیں لیکن فلسطینی تنظیموں نے ان الزامات کی کبھی تصدیق نہیں کی۔

واضح رہے کہ گذشتہ ایک سال کے دوران مصر کی سکیورٹی فورسز نے جزیرہ نما سیناء کے مختلف علاقوں سے بھاری مقدار میں اسلحہ اور میزائل برآمد کیے ہیں۔گذشتہ ماہ سکیورٹی حکام نے العریش کے نواح سے ہی فرانسیسی ساختہ سترہ میزائل برآمد کیے تھے۔