.

جنوبی اسرائیل پر سیناء کے علاقے سے میزائل حملہ

ایلات میں 3 میزائل گرنے کے بعد ہوائی اڈا بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی اسرائیل کے علاقے ایلات کو صحرائے سیناء سے داغے جانے والے تین میزائیلوں سے نشانہ بنایا گیا ہے، تاہم اس حملے میں کسی قسم کا جانی اور مالی نقصان نہیں ہوا۔ حملے کے بعد اسرائیلی حکام نے شہر میں ایلات کا ہوائی اڈا بند کر دیا۔

اسرائیلی فوج نے بھی سیناء سے تین مزائیلوں کے داغے جانے کی تصدیق کی ہے۔ برطانوی خبر رساں اداے 'رائیٹرز' نے اسرائیلی پولیس کا بیان نقل کیا ہے جس میں کہا گیا ہے بدھ کے روز جنوبی اسرائیلی علاقے ایلات میں زوردار دھماکے کی آواز سنی گئی، جس کے بعد خطرے کے سائرن بج اٹھے۔ درایں اسرائیلی ریڈیو نے اس کارروائی کو میزائل حملہ قرار دیا۔

ادھر 'العربیہ' کے نمائندے نے اردن کے سیکیورٹی ذرائع کے حوالے سے اس امر کی تردید کی ہے کہ یہ میزائل العقبہ شہر پر گرے۔ ابتدائی رپورٹس میں بتایا گیا تھا کہ اردن کے علاقے العقبہ میں دو میزائیل گرے ہیں۔

یاد رہے کہ دو ہفتے پہلے ہی اسرائیل نے "آئرن ڈوم' نامی میزائل شکن بیٹریاں ایلات میں نصب کیں۔ یہ اقدام ان پیشگی انٹلیجنس رپورٹس کے بعد اٹھایا گیا تھا جن سے ایلات پر میزائل حملے کی طرف اشارہ کیا گیا تھا۔

اسرائیلی فوجی ترجمان میکی روزنفیلڈ نے بتایا کہ میزائل ایلات کی ایک کالونی کے قریب کھیت میں گرا، تاہم انہوں نے کہا وہ میزائل داغے جانے کا مقام نہیں بتا سکتے۔ ابھی تک میزائل حملے سے کسی جانی مالی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔ دھماکا خیز مواد کے ماہرین علاقے کا سروے کر رہے ہیں تاکہ نقصان اور میزائل کی نوعیت کا تعین کیا جا سکے۔

درایں اثنا ایلات بلدیہ کے میئر اسحاق ہالوی نے اسرائیلی فوجی ریڈیو کو بتایا کہ سیناء کے علاقے سے فائر کئے گئے دو میزائل ایلات کے علاقے میں کھلی جگہ گرے۔

ایلات پر گزشتہ برس نومبر میں میزائل حملہ کیا گیا تھا۔ مصر کے سابق معزول صدر حسنی مبارک کا اقتدار ختم ہونے کے بعد سے اسرائیل اور مصر کی سرحدی پر واقع سیناء کے علاقے میں انتہا پسند تنظیموں کی کارروائیوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے جس کے بعد سے اسرائیل عوام اور حکومت یہودی آبادی کی حفاظت کے لئے پہلے سے زیادہ ہوشیار ہو گئی ہے۔