اسرائیلی فضائیہ نے لبنان سے آنے والا ڈرون سمندر میں مار گرایا

لبنان سے بغیر پائلٹ جاسوس طیارے کی آمد سنگین واقعہ ہے: نیتن یاہو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیلی فضائیہ نے جمعرات کو پڑوسی ملک لبنان کی سمت سے آنے والے ایک بغیر پائلٹ جاسوس طیارے کو مبینہ طور پر اپنی فضائی حدود میں مار گرایا ہے۔

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''میں اپنی سرحدوں کی خلاف ورزی کا یہ ایک سنگین واقعہ سمجھتا ہوں اور ہم اسرائیلی شہریوں کے تحفظ کے لیے جو کچھ ہم سے بن پڑا،وہ کریں گے''۔

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بغیر پائلٹ جاسوس طیارے کی اڑان کا لبنان کی فضا میں پتا چلا تھا اور ایک ایف سولہ طیارے نے اسرائیلی بندرگاہ حیفا سے پانچ ناٹیکل میل( نو کلومیٹر) دور اس کو جالیا اور تباہ کردیا ہے۔اسرائیلی بحریہ اس کے بعد سمندر میں اس کا سراغ لگانے میں مصروف تھی۔

اسرائیلی فضائیہ نے اس سے قبل اکتوبر 2012ء میں اسی طرح کے واقعہ میں ایک بغیر پائلٹ جاسوس طیارے کو مارگرایا تھا۔ لبنان کی شیعہ تنظیم حزب اللہ کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ اس نے ان دونوں ڈرون طیاروں کو اسرائیل کی فضائی حدود میں بھیجا ہے۔

انتہا پسند صہیونی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے حال ہی میں اس خدشے کا اظہار کیا تھا کہ حزب اللہ شام میں جاری خانہ جنگی اور عدم استحکام کا فائدہ اٹھا سکتی ہے اور وہ کھیل کا پانسا پلٹنے والے ہتھیار حاصل کرسکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں