.

علامہ یوسف القرضاوی اگلے ماہ غزہ کا دورہ کریں گے

دورے سے حماس کو اپنی سفارتی تنہائی ختم کرانے کا موقع ملے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

غزہ میں وزارت اسلامی امور کے سربراہ نے اعلان کیا ہے کہ عالم اسلام کے معروف اسکالر علامہ یوسف القرضاوی اسلامی تحریک مزاحمت [حماس] کے زیر نگیں علاقے غزہ کی پٹی کا اگلے ماہ [مئی] میں دورہ کریں گے۔

علامہ یوسف القرضاوی کا غزہ کا یہ پہلا دورہ ہو گا۔ یوسف القرضاوی اپنے خطابات میں حماس کی کھلے عام حمایت کرتے ہیں۔ ان کا دورہ غزہ اس بات کا بین ثبوت ہو گا کہ اسلامی تحریک مزاحمت خاموشی اور آہستگی کے ساتھ اپنی سفارتی ناکہ بندی ختم کر رہی ہے۔

ترکی کے وزیر اعظم رجب طیب ایردوآن بھی مئی کے دوران غزہ کا دورہ کرنے والے ہیں۔ گزشتہ برس قطر کے امیر نے غزہ کا دورہ کیا تھا۔

غزہ کی وزارت اسلامی امور کے نگران وزیر اسماعیل رضوان نے اپنے اعلان میں یہ واضح نہیں کیا کہ یوسف القرضاوی کتنی دیر غزہ میں قیام کریں گے۔ علامہ یوسف القرضاوی کے کسی ترجمان سے فوری طور پر متوقع دورے کے سلسلے رابطہ ممکن نہیں ہو سکا۔

اس دورے کے ذریعے حماس کو غزہ میں اپنے سیاسی حیلفوں اور قدامت پسند سخت گیر اسلامی تنظیموں کے مقابلے میں اپنی ساکھ بہتر کرنے کا موقع ملے گا۔ شدت پسند اسلامی گروپ، بعض امور میں حماس پر بہت زیادہ اعتدال پسند ہونے کی پھبتی بھی کستے ہیں۔