.

شامی باغیوں کا دمشق کے ہوائی اڈے پر راکٹ حملہ

ہوائی اڈے پر کھڑے تجارتی طیارے اور ایندھن کے ٹینک کو آگ لگ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں صدر بشارالاسد کی حکومت کے خلاف برسرپیکار باغی جنگجوؤں نے جمعہ کو دارالحکومت دمشق کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر دو راکٹ فائر کیے ہیں۔

سرکاری خبررساں ایجنسی سانا کی اطلاع کے مطابق راکٹ حملے کے بعد ہوائی اڈے پر آگ لگ گئی۔ان میں سے ایک راکٹ مٹی کے تیل کے ایک ٹینک کو لگا اور دوسرے نے وہاں کھڑے ایک تجارتی طیارے کو ہٹ کیا ہے جس سے اس کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

ایجنسی کے مطابق راکٹوں کے نتیجےمیں ہوائی اڈے پر لگنے والی آگ پر قابو پا لیا گیا ہے۔فضائی ٹریفک معمول کے مطابق جاری ہے اور پروازوں کی آمد ورفت میں کوئی خلل واقع نہیں ہوا۔

شام میں اسد خاندان کے گذشتہ چار دہائیوں پر محیط اقتدار کے خلاف مارچ 2011ء سے جاری مسلح بغاوت میں اب تک ستر ہزار سے زیادہ افراد مارے جاچکے ہیں اور لاکھوں بے گھر ہوچکے ہیں۔ملک کے مختلف علاقوں میں حالیہ دنوں میں ایک مرتبہ پھر سرکاری فوج اور باغیوں کے درمیان لڑائی میں تیزی آئی ہے اور وسطی صوبے حمص اور دمشق کے نواحی علاقوں میں ان کے درمیان خونریز جھڑپیں ہورہی ہیں.