مصر میں بعد از انقلاب جرائم کی شرح میں ہوشربا اضافہ

مبارک مخالف تحریک کے دوران ہزاروں قیدیوں کے فرار کے بعد جرائم بڑھ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصر میں 2011ء میں سابق مطلق العنان صدر حسنی مبارک کی حکومت کا تختہ الٹنے کے بعد سے جرائم کی شرح میں نمایاں اضافہ ہوا ہے اور انقلاب کی کوکھ سے ثمرات برآمد ہونے کے بجائے جرائم جنم لے رہے ہیں۔

مصر کی وزارت داخلہ کے حکام کے مطابق ملک میں قتل کی شرح 2011ء کے انقلاب کے بعد سے تین گنا بڑھ گئی ہے اور ملک میں پہلے سے موجود اقتصادی بحران کے نتیجے میں بے روزگاری کی شرح میں بھی اضافہ دیکھا گیا ہے۔

وزیرداخلہ عبدالفتاح عثمان نے فنانشیل ٹائمز کو ایک انٹرویو میں بتایا ہے کہ ''جرائم کی وجہ سے پولیس متاثر ہورہی ہے۔انقلاب کے بعد ریاستی ادارے زوال کا شکار ہوئے ہیں اور وہ مستحکم نہیں ہوئے حتیٰ کہ عدلیہ بھی ایک قدم پیچھے ہٹ گئی ہے''۔

اخبار کی رپورٹ کے مطابق سال 2010ء میں ملک بھر میں مسلح ڈکیتی کی 233 وارداتیں ہوئی تھیں۔گذشتہ سال ان وارداتوں کی تعداد 2807 رہی تھی۔2010ء میں گھروں پر 7368 حملوں کے واقعات رپورٹ ہوئے تھے لیکن 2012ء میں ان حملوں کی تعداد بڑھ کر 11699 ہوگئی تھی۔

مصری وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ ایک اور بڑا مسئلہ ملک میں ہتھیاروں کی بیرون سے دھڑا دھڑ آمد ہے۔ان کے بہ قول جرائم کی شرح میں مجموعی طور پر تین گنا اضافہ ہوا ہے۔اسی طرح حالیہ مہینوں کے دوران اغوا برائے تاوان کی وارداتوں بھی بڑھ گئی ہیں حالانکہ پہلے اس طرح کے واقعات شاذونادر رونما ہوتے تھے۔

ان کے بہ قول 2010 ء میں اغوا برائے تاوان کی 107 وارداتیں ہوئی تھیں جو2012ء میں بڑھ کر 412 ہوگئی تھیں کیونکہ لوگوں کو اس عرصہ کے دوران پولیس پر کوئی اعتماد نہیں رہا تھا اور وہ اغواکاروں کے چنگل سے اپنے پیاروں کی رہائی کے لیے تاوان کی رقم ادا کرتے رہے تھے۔

دوسری جانب انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے کارکنان کا کہنا ہے کہ مصر میں جرائم کی شرح میں اضافہ کی ایک بڑی وجہ پولیس کی ناقص کارکردگی ہے کیونکہ وہ جرائم کی بیخ کنی کے لیے جدید تیکنیکوں سے آگاہ ہے اور نہ وہ جدید آلات سے لیس ہے۔ان کے بہ قول سابق صدر کے خلاف عوامی احتجاجی تحریک کے دوران ملک کی مختلف جیلوں سے ہزاروں جرائم پیشہ افراد کو رہا کرا لیا گیا تھا اور ایسے عناصر کی وجہ سے ہی دراصل ملک میں جرائم بڑھ گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں