.

مصری وزیراعظم کے موٹر کیڈ پر مسلح افراد کی حملے کی کوشش

محافظوں اورکارسواروں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں ایک شخص زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے وزیراعظم ہشام قندیل کے قافلے پر مبینہ طور مسلح ٹھگوں نے حملہ کرنے کی کوشش کی ہے اور ان کے اور سرکاری محافظوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں ایک شخص زخمی ہوگیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق اتوار کو وزیراعظم ہشام قندیل کا قافلہ دریائے نیل پر چھے اکتوبر پل کے اوپر سے گزر رہا تھا۔اس دوران ایک کار اچانک اس کے راستے میں آگئی۔اس میں پانچ مسلح افراد سوار تھے اور وزیراعظم کے محافظوں نے کار سامنے آنے پر اس پر فائرنگ کردی۔اس کے جواب میں کار میں سوار افراد نے بھی فائرنگ شروع کردی۔اس کے بعد کار کے ڈرائیور اور اس میں سوار چار افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ایک سکیورٹی عہدے دار نے بتایا کہ ''مشتبہ افراد کے بہ قول وہ موٹرکیڈ میں وزیراعظم ہشام قندیل کی موجودگی سے آگاہ نہیں تھے اور انھوں نے ان کی کار پر فائرنگ نہیں کی''۔وزیراعظم کے محافظوں اور مسلح افراد کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں ایک اور کارسوار زخمی ہوا ہے۔مصری سکیورٹی سروس کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ سیاسی نوعیت کا نہیں ہے۔

واضح رہے کہ مصری میڈیا نے فروری میں قاہرہ کے میدان التحریر میں وزیراعظم ہشام قندیل کے قافلے پر مسلح افراد کے پتھراؤ اور بوتلوں سے حملے کی اطلاع دی تھی۔بعد میں ان کے دفتر نے ایک بیان میں کہا تھا کہ وزیراعظم کا نوجوانوں اور شورش پسندوں سے سامنا ہوا تھا۔