.

حزب اللہ شام سے کھیل کا پانسا پلٹنے والے ہتھیار لینے کو تیار

شام،اسرائیل کی کسی بھی جارحیت کا جواب دینے کی صلاحیت رکھتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کی جنگجو تنظیم حزب اللہ کے سربراہ سید حسن نصراللہ نے کہا ہے کہ ان کا گروپ شام سے کھیل کا پانسا پلٹنے والے ہتھیار وصول کرنے کو تیار ہے۔

انھوں نے جمعرات کو ایک تقریر میں کہا ہے کہ شام مقبول مزاحمت کو ہتھیار دے کر اسرائیل کی کسی بھی جارحیت کا جواب دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔انھوں نے اسرائیل کو مخاطب ہوکر کہا کہ ''اگر آپ کے حملے کا مقصد مزاحمت کی صلاحیت کو مضبوط ہونے سے روکنا ہے تو پھر شام مزاحمت کو ایسے جدید ہتھیار دے گا جو پہلے نہیں دیکھے گئے''۔

حسن نصراللہ کا کہنا تھا کہ ''اگر شام ان کی جماعت کو یہ ہتھیار مہیا کرتا ہے تو ان سے خطے میں طاقت کے توازن کو تبدیل کیا جاسکتا ہے''۔ان کا اشارہ حزب اللہ اور اسرائیل کی جانب تھا۔

انھوں نے مزید کہا کہ ''ان کا جنگجو گروپ گولان کی چوٹیوں پر مقبول عوامی مزاحمت کے ساتھ کھڑا ہے۔انھوں نے مزاحمت کے لیے اپنی عسکری اور اخلاقی حمایت کا اعادہ کیا۔

حسن نصراللہ کی اس تقریر سے چندے قبل شام نے اعلان کیا ہے کہ وہ اسرائیل کے دمشق پر کسی بھی نئے حملے کا جواب دینے کے لیے تیار ہے۔شام کے نائب وزیرخارجہ فیصل مقداد نے ایک بیان میں کہا کہ ''ان کا ملک اسرائیل کی جانب سے کسی بھی نئے حملے کا فوری اور سخت جواب دے گا''۔