اسرائیلی محاصرے کا شکار غزہ میں ''فاسٹ فوڈ'' کی سست رفتار آمد

فلسطینیوں کو مصر میں آرڈر کے بعد فرائیڈ چکن اور برگروں کا چار گھنٹے تک انتظار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی فوج کے محاصرے کا شکار غزہ کی پٹی میں عام ضروریات زندگی تو تاخیر سے پہنچتی ہی ہیں مگر عجیب بات یہ ہے وہاں ''فاسٹ فوڈ'' بھی سست رفتاری سے اور کچھوے کی چال چل کر پہنچتا ہے اور غزہ شہر کے مکینوں تک مصر سے ''کے ایف سی'' کے برگر اور فرائیڈ چکن وغیرہ آرڈر دینے کے چار گھنٹے یا اس سے بھی زیادہ وقت کے بعد پہنچتے ہیں۔

اسرائیلی فوج کی بحری ،برّی اور فضائی ناکہ بندی کے باوجود غزہ کے مکینوں کے شوق میں کوئی کمی واقع نہیں ہوئی۔وہ اپنی مرغوب غذا کے حصول کے لیے پڑوسی ملک مصر میں آرڈر دیتے ہیں حالانکہ ان تک کے ایف سی کے ''تیز کھانے'' تاخیر کے علاوہ مہنگے داموں پہنچتے ہیں۔

مصر میں ایک خاندان کو ''کے ایف سی'' کے برگر اور فرائیڈ چکن وغیرہ گیارہ ڈالرز میں دستیاب ہیں لیکن یہی ''فاسٹ فوڈ'' سیناء کے سرحدی علاقے میں زیرزمین سرنگوں کے ذریعے جب غزہ پہنچتا ہے تو اس کی قیمت تیس ڈالرز کے لگ بھگ ہوجاتی ہے۔

لیکن غربت کا شکار غزہ کی پٹی کے مکینوں کا شوق دیکھیے وہ فرائیڈ چکن کے لیے دُگنا سے بھی زیادہ قیمت ادا کرنے کو تیار ہوتے ہیں۔انھیں مصر سے یہ کھانے الیمامہ نامی کمپنی پہنچاتی ہے۔اس کمپنی کا کہنا ہے نقل وحمل کے اخراجات اور اسمگلنگ فیس کی وجہ سے قیمت دگنا سے بھی بڑھ جاتی ہے۔

اس کمپنی کے اکاؤنٹینٹ محمد المدنی نے بتایا کہ بعض مرتبہ تو غزہ کی پٹی کی حکمران حماس کے سکیورٹی اہلکار کھانے کو چیک کرتے ہیں،بعض اوقات سیناء میں آرڈر لانے والی ٹیکسی لیٹ ہوتی ہے۔اس طرح انھیں چار صارفین تک فاسٹ فوڈ پہنچانے میں چار گھنٹے یا اس سے بھی زیادہ وقت لگ جاتا ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیل نے جون 2006ء سے غزہ کی پٹی کا محاصرہ کررکھا ہے جس کے پیش نظر اس پورے علاقے کو ایک کھلی جیل کا نام دیا جاتا ہے کیونکہ وہاں روزمرہ استعمال کی عام اشیاء بھی ایک جانب تو اسرائیلی حکام اور دوسری جانب مصری حکام کی نظروں سے گزرے بغیر نہیں جاسکتی ہیں۔

اس صورت حال کے پیش نظر مصر اور غزہ کی پٹی کے درمیان سرحدی علاقے میں فلسطینیوں نے زیرزمین سرنگوں کا ایک نیٹ ورک قائم کررکھا ہے اور وہاں سے یہ اشیاء معمولی فیس یا باربرداری کے اخراجات ادا کرکے علاقے کے شہروں اور قصبوں میں پہنچائی جاتی ہیں۔ان میں ہتھیار ،تعمیراتی سامان ،سگریٹ،دوسری اشیاء اور مویشی وغیرہ شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں