آئندہ جنگ اسرائیل کا ایک سرپرائز ہو گی: صہیونی جنرل

"اسرائیلی فضائیہ شام پر حملے کی تیاریوں میں ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فضائی کے سربراہ میجر جنرل عمیر ایچل نے خبردار کیا ہے کہ اگلی جنگ اسرائیل کے لیے ایک 'سرپرائز' ہو گی اور متعدد محاذوں پر لڑی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ’’ایس 300‘‘ میزائل روس سے شام لائے جا رہے ہیں جبکہ دیگر بہت سے عناصر بھی اسی صلاحیت کے حصول کے لیے کوشاں ہیں۔

تل ابیب کے قریب فشر انسٹی ٹیوٹ آف ائیر سپیس اسٹڈی میں ایک تقریب سے خطاب میں میجر جنرل عمیر ایچل نے کہا کہ ایک فوری کامیابی کے لیے اسرائیل کی فضائی برتری بنیادی شرط ہے، فضائی برتری کی ایک تزویراتی اہمیت ہے۔ لہذا اسرائیل کے لیے ممکن نہیں کہ اس قسم کا اسلحہ مختلف گروپوں کے ہاتھ لگنے دے۔ ہم پر لازم ہے کہ لبنان اور غزہ میں مقابلے کے ہمہ وقت تیار رہیں۔

انہوں نے کہا کہ جدید ترین اسلحے کو شامی جنگجو جہادیوں یا لبنان میں حزب اللہ کے ہاتھوں میں جانے سے روکنے کے لیے اسرائیل شام پر حملے کے لیے پوری طرح تیار ہے۔ انہوں نے اسرائیلیوں کو کہا کہ حزب اللہ یا اس کی مدد کرنے والے ایران کے ساتھ جنگ کی صورت میں طویل اور خوفناک تصادم کے لیے تیار رہیں۔

عمیر ایچل نے مزید کہا کہ کہ اگر کل شامی حکومت کو گرا دیا جاتے ہیں تو ہمیں جدید ترین اسلحے کی لوٹ مار کو روکنے کے لیے اقدامات کی ضرورت ہوگی۔ لہذا ہم پرلازم ہیں کہ ہم ایسی تیاری کرکے رکھیں کہ شام میں پیدا ہونے والے کسی بھی منظر نامے پر چند گھنٹوں میں قابو پا لیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں