عوامی مسائل اجاگر کرنے پر''الثامنہ'' شو کی مقبولیت کا نیا ریکارڈ

ایم بی سی ٹی وی پر 25 برس سے بچھڑے ماں اور بیٹے کی ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عرب دینا کے مقبول عام سیٹلائیٹ ٹی وی چینل ''ایم بی سی'' پر معروفی صحافی و اینکر پرسن داؤد الشریان کے فلیگ شپ پروگرام "الثامنہ" نے 25 برس سے بچھڑے ماں اور بیٹے کو ملوا دیا۔ ٹی وی سکرین پر ملاقات کے جذباتی مناظر دیکھ کر ناظرین آبدیدہ ہو گئے۔

داؤد الشریان اپنے مقبول عام شو 'الثامنہ' میں عوامی مسائل پر بات کرتے ہیں جس کی وجہ سے پروگرام کو زبردست پذیرائی ملی ہے۔ اس پذیرائی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ شو کی ریکارڈنگ یو ٹیوب پر بھی تیس لاکھ افراد دیکھ چکے ہیں۔

داؤد الشریان کا کہنا ہے کہ ان کے پروگرام میں سعودی اور غیر سعودی ماؤں کو ان کے بیٹوں سے ملوایا جاتا ہے۔ یہ مصری ماں سعودی عرب میں مقیم اپنے بیٹے کو 25 سال سے نہیں دیکھ پائی تھی جس کا پروگرام کے توسط سے انتظام کیا گیا۔ پروگرام کی یہ قسط اس قدر مقبول ہوئی کہ یو ٹیوب پر اسے اب تک تیس لاکھ افراد دیکھ چکے ہیں۔

پروگرام کی وساطت سے سعودی عرب میں مقیم اس نوجوان کو نہ صرف اپنی ماں سے ملاقات نصیب ہوئی بلکہ اسے نوکری بھی مل گئی جس کا پروگرام میں ہی اعلان کردیا گیا۔ اسی طرح نوجوان کو گھر کی خریداری، قرض اور مہر کی ادائیگی کے لیے بھی رقوم دینے کا اعلان کیا گیا۔میزبان داؤد الشریان کا کہنا تھا:''لوگوں کی خبریں ہی حقیقی ڈراما ہیں۔ ذرائع ابلاغ جب عوام کے بارے میں خبر دیتے ہیں تو اسے پذیرائی ملنا لازمی امر ہے''۔

ماں اور بیٹے کی ملاقات کے حوالے سے "الثامنہ'' کی قسط کے حوالے سے میزبان کا کہنا تھا کہ انھیں ایسے سعودی نوجوان کے بارے میں آگاہی ہوئی جو ربع صدی سے اپنی مصری شہری والدہ سے نہیں مل سکا تھا۔ہم نے دونوں کی ملاقات کا بندوبست کیا۔ والدہ کو قاہرہ میں سعودی سفارت خانے کے ذریعے ریاض مدعو کیا گیا۔ پروگرام میں شرکت کے لیے نوجوان کو بھی دارالحکومت آنے کی دعوت دی گئی۔ دونوں کی ملاقات آن ایئر شو میں کرائی گئی جس کے بعد سکرین پر ایسے ڈرامائی مناظر دیکھنے کو ملے جو سعودی میڈیا میں خال خال ہی نظر آتے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ اس قسط کے نشر ہونے کے بعد بہت سے مخیّر حضرات نے نوجوان سے اس کے گھر میں ملاقات کی اور یوں اس کے تمام قرضے اور مہر کی ادا ہو گئی۔ داؤد الشریان نے مزید بتایا کہ ان کے شو کے ذریعے غربت کے ستائے افراد کے حالات سے آگاہی ہو رہی ہے اور ان کے حالات وواقعات کو پیشہ ورانہ انداز میں اسکرین کی زینت بنانے کے مختلف طریقوں پر غور کر رہے ہیں تاکہ شو یکسانیت کا شکار نہ ہو۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں