.

یو اے ای: اخوان کی شاخ قائم کرنے کے الزام میں 30 افراد کے خلاف مقدمات

تحقیقات میں بغیر اجازت جماعت قائم کرنے کا الزام ثابت ہوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی جنرل پراسیکیوشن نے 30 افراد کے مقدمات سپریم یونین کورٹ بھجوا دیئے ہیں۔ یو اے ای کی سرکاری خبر رساں ایجنسی 'وام' کے مطابق ملزمان پر ملک میں بغیر اجازت اخوان المسلمون کی بین الاقوامی شاخ قائم کرنے کی کوششوں کا الزام ہے۔ جن افراد کے مقدمات یونین کورٹ بھیجے گئے ہیں ان میں مصریوں کے علاوہ مقامی شہری بھی شامل ہیں۔

اٹارنی جنرل آف دی سٹیٹ پراسیکیوشن احمد راشد الضنحاتی نے بتایا کہ ملزموں کے خلاف استغاثہ کی کارروائی کا فیصلہ انتہائی محنت سے کی گئی تحقیقات کا نتیجہ ہیں جس میں یہ بات پایہ ثبوت کو پہنچی ہے کہ ملزمان میں سے چند افراد نے بغیر اجازت اخوان المسلمون کی بین الاقوامی شاخ قائم کی۔

ایڈووکیٹ الضنحانی کے مطابق ملزموں نے اس مقصد کے لئے ایک خفیہ تنظیم سے فنڈ لئے تاکہ مملکتی امور کا کنڑول سنبھالا جا سکے۔ خفیہ تنظیم سے مالی معاونت لیکر حکومت مخالف سرگرمیاں منظم کرنے کی پاداش میں ان پر ایک علاحدہ مقدمہ چلایا گیا۔

یو اے ای میں سیکیورٹی حکام نے 'القاعدہ' سے منسلک ایک دہشت گرد سیل کا سراغ لگا کر کے اس میں شامل مختلف عرب ملکوں سے تعلق رکھنے والے سات افراد کو گرفتار کیا۔ اس وقت ایک سرکاری عہدیدار نے گرفتاری کی وجہ بیان کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ سیل ملکی سیکیورٹی اور یو اے ای کے شہریوں اور یہاں مقیم دنیا بھر سے آئے ہوئے تارکین وطن کی سلامتی کو گزند پہنچانے سے متعلق سرگرمیوں میں ملوث تھے۔