.

انجلینا جولی کا شام ۔ اردن سرحد پر قائم پناہ گزین کیمپ کا دورہ

"شام کے حالات اکیسویں صدی کا سنگین انسانی المیہ ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے شامی پناہ گزین کی خصوصی ایلچی اور معروف امریکی اداکارہ انجلینا جولی اور کمشنر جنرل انطونیو گوٹیریز نے اردن کی سرحد پر شامی پناہ گزینوں کے لیے قائم کیے گئے "الزعتری" مہاجرکیمپ کا دورہ کیا۔ اس دورے کا اہتمام عالمی یوم پناہ گزین کی مناسبت کیا گیا تھا جس میں عالمی ادارے کے مندوبین نے شامی پناہ گزینوں سے ملاقات کی اور انہیں درپیش مشکلات کے بارے میں آگاہی حاصل کی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے انجلینا جولی نے شام کی موجودہ صورت حال کو اکیسویں صدی کا ہولناک انسانی المیہ قرار دیا اور عالمی برادری سے پناہ گزینوں کے لیے مزید امداد کی فراہمی کی اپیل کی۔

الزعتری کیمپ میں نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جولی عالمی برادری سے یہ مطالبہ کرتی ہوں کہ وہ باہمی اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے شام میں جاری تشدد کے خاتمے اور بحران کے کسی سیاسی حل پراتفاق رائے پیدا کریں "۔

انجلینا جولی نے سلامتی کونسل سے بھی شام کے بحران کے حل کے لیے ٹھوس لائحہ عمل مرتب کرنے اور پرتشدد کارروائیاں بند کرانے کی ضرورت پر زور دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ شام سے ہر چالیس سیکنڈ میں کم از کم ایک شہری پڑوسی ملکوں میں ھجرت پرمجبور ہو رہا ہے۔

مسز جولی نے بتایا کہ اس نے خود بھی کئی پناہ گزینوں سے بات کی جو خون ریز واقعات اور تباہ کاریوں کے باعث اپنے گھر بار چھوڑ کر مہاجر کیمپ میں پہنچے تھے۔ ان مہاجرین نے شکایت کی کہ جنگ کے باعث وہ اپنے گھر بار اور خاندان تک کو کھو چکے ہیں۔