.

فلسطینی وزیراعظم رامی الحمد للہ نے اپنا استعفیٰ واپس لے لیا

صدر محمود عباس سے ملاقات کے بعد استعفیٰ واپس لینے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مغربی کنارے میں فلسطینی وزیراعظم رامی الحمد للہ نے صدر محمود عباس سے ملاقات کے بعد اپنا استعفیٰ واپس لینے کا اعلان کردیا ہے۔

رام اللہ سے العربیہ کے نمائندے نے اطلاع دی ہے کہ رامی الحمد للہ نے جمعہ کو صدارتی ہیڈ کوارٹرز میں محمود عباس سے ملاقات کی ہے اور اس کے بعد ان کے سرکاری قافلے کو واپس جاتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔

اے ایف پی نے ایک سرکاری عہدے دار کے حوالے سے بتایا ہے کہ رامی الحمد للہ نے دوگھنٹے تک فلسطینی صدر سے بات چیت کی ہے اور انھیں اپنا استعفیٰ واپس لینے کے فیصلے سے آگاہ کردیا ہے۔

رامی الحمد للہ نے گذشتہ روز اپنے عہدے سے اچانک استعفیٰ دے دیا تھا۔تاہم صدر محمود عباس نے ان کا استعفیٰ منظور نہیں کیا تھا۔وہ مبینہ طور پر اپنے دو نائبین کے ساتھ اختیارات کی تقسیم پر تنازعے کی وجہ سے اچانک مستعفی ہوئے تھے۔

رامی الحمدللہ کو سلام فیاض کی جگہ مغربی کنارے میں فلسطینی اتھارٹی کا وزیراعظم مقرر کیا گیا تھا اور انھوں نے اپنی چوبیس رکنی کابینہ کے ساتھ چھے جون کو حلف اٹھایا تھا۔اس کابینہ میں پہلی مرتبہ دو نائب وزرائے اعظم بھی مقرر کیے گئے ہیں۔ان کے پیش رو وزیراعظم سلام فیاض اپریل کے وسط میں صدر محمود عباس کے ساتھ اختلافات کے بعد مستعفی ہوگئے تھے۔