.

عرب آئیڈل ہیرو فلسطینی نوجوان کا غزہ پہنچنے پر پُرجوش استقبال

رفح کراسنگ پرغزہ اور مغربی کنارے سے تعلق رکھنے والے ہزاروں فلسطینی اُمڈ آئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اس سال کا عرب آئیڈل ٹیلنٹ شو جیتنے والے فلسطینی نوجوان گلوکار محمد آصف کا منگل کو مصر کی سرحد کے ساتھ واقع رفح بارڈر کراسنگ کے ذریعے غزہ کی پٹی پہنچنے پر شاندار استقبال کیا گیا ہے۔

محمد آصف نے ہفتے کے روز بیروت میں منعقدہ گلوکاری کے مقابلے میں عرب ٹائٹل جیتا ہے۔وہ آج جب مصر سے رفح پہنچے تو ان کی ایک جھلک دیکھنے کے لیے ہزاروں کی تعداد میں فلسطینی موجود تھے۔انھوں نے فلسطینی پرچموں کے علاوہ نوجوان گلوکار کو مبارک باد دینے کے لیے بینرز اٹھا رکھے تھے۔

تئیس سالہ گلوکار اسرائیلی محاصرے کا شکار غزہ کی پٹی کے قصبے خان یونس سے تعلق رکھتے ہیں اور انھیں ان کے مداحوں نے فلسطینی ہیرو قرار دیا ہے۔ان کے استقبال کے لیے مغربی کنارے سے تعلق رکھنے والے فلسطینی بھی موجود تھے۔ان کی کامیابی پر متحارب فلسطینی ایک مرتبہ پھر اپنے اختلافات کو بھلا کر متحد ہوگئے ہیں۔

رفح سے خان یونس جاتے ہوئے استقبالی قافلے میں شامل گاڑیوں میں آصف کے گائے گانے بلند آواز میں بج رہے تھے۔غزہ میں حماس کی حکومت نے ان کا سرکاری طور پر استقبال کیا ہے اور اس موقع پر وزارت ثقافت کے ڈائریکٹر فکری جودہ بھی موجود تھے۔انھوں نے کہا کہ ''آصف نے غیر معمولی کامیابی حاصل کی ہے اور ہم اس کی سپورٹ کرتے ہیں۔ہمیں امید ہے کہ وہ اپنے خداداد صلاحیت کو فلسطینی نصب العین کے لیے استعمال کریں گے۔

آصف نے جونہی اپنی سرزمین پر قدم رکھا تو وہ سجدہ ریز ہوگئے۔اس کے بعد انھوں نے حماس کے حکام کے ساتھ نیوز کانفرنس میں اپنے شاندار استقبال پر آنے والے لوگوں کا شکریہ ادا کیا اور اس توقع کا اظہار کیا کہ ان کی استقبالیہ تقریبات کے دوران ہوائی فائرنگ نہیں کی جائے گی۔

انھوں نے یہ بھی توقع ظاہر کی کہ فلسطینیوں کے درمیان اختلافات کا خاتمہ ہو۔انھوں نے فلسطینی عوام کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ وہ اتحاد ،اور اتحاد قائم کریں۔واضح رہے یہ پہلا موقع ہے کہ ایک فلسطینی نوجوان نے گلوکاری کاکوئی مقابلہ جیتا ہے اور اس کو ایک بڑا کارنامہ قرار دیا جارہا ہے۔۔