.

صدر مرسی کے برطرف پراسیکیوٹر جنرل کو عدالت نے بحال کردیا

عبدالمجید محمود کی بحالی سے صدر محمد مرسی پر دباؤ میں اور اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی اعلیٰ عدلیہ نے پبلک پراسیکیوٹر عبدالمجید محمود کی ان کے عہدے پر بحالی کی توثیق کردی ہے۔

مصر کی کورٹ آف اپیلز نے منگل کو اپنے حتمی فیصلے میں عبدالمجید محمود کو اٹارنی جنرل کے عہدے پر بحال کردیا تھا۔انھیں صدر محمد مرسی نے نومبر 2012ء میں برطرف کردیا تھا اور ان کی جگہ طلعت عبداللہ کو پراسیکیوٹر جنرل مقرر کیا تھا۔ عبدالمجید محمود نے اپنی برطرفی کے خلاف عدالت میں اپیل دائر کی تھی۔اب ان کی بحالی پر طلعت عبداللہ کا کہنا ہے کہ وہ تمام عدالتی فیصلوں کا احترام کرتے ہیں۔ان پر اخوان المسلمون کی طرف داری کا الزام عاید کیا جاتا رہا ہے۔

مصر کی ایک اپیل عدالت نے چند ماہ قبل سابق پراسیکیوٹر جنرل عبدالمجید محمود کی برطرفی کے صدارتی حکم کو کالعدم قرار دے دیا تھا اور انھیں ان کے عہدے پر بحال کرنے کا حکم دیا تھا۔اس عدالتی فیصلے کے بعد عبدالمجید محمود کا کہنا تھا کہ انھوں نے ابھی مستقبل کے لائحہ عمل کے بارے میں کوئی فیصلہ نہیں کیا کہ انھوں نے کیا کرنا ہے۔اب ان کی بحالی کے فیصلے کی توثیق کے بعد مصر میں جاری بحران اور شدید ہوگیا ہے۔

مصری ججز کلب نے کچھ عرصہ قبل پراسیکیوٹر جنرل طلعت عبداللہ پر زوردیا تھا کہ وہ اپنے پیش رو کی بحالی سے متعلق عدالتی فیصلے کا احترام کریں اور اپنا عہدہ چھوڑ دیں۔دوسری صورت میں انھیں عدالتی کارروائی کا سامنا ہوسکتا ہے۔