.

مصری معاملات میں مداخلت پر قاہرہ کا ترکی سے احتجاج

قاہرہ میں ترک سفیر کی دفتر خارجہ طلبی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصری دارلحکومت قاہرہ میں متعین ترکی کے سفیر حسين عونی بوطصالی کو دفتر خارجہ طلب کر کے ان سے انقرہ کی جانب سے مصر کے اندرونی معاملات میں مداخلت پر شدید احتجاج کیا گیا۔

'رائٹرز' کے مطابق ترک سفیر کو دفتر خارجہ طلبی کے موقع پر ایک احتجامی مراسلہ بھی دیا گیا اور ہدایت کی گئی کہ وہ اسے اپنی حکومت تک پہنچائیں۔ ترک سفیر کی دفتر خارجہ میں طلبی ان انقرہ سے جاری ہونے والے ان بیانات کے بعد عمل میں آئی جن میں سابق صدر محمد مرسی کی معزولی کو 'ناقابل برداشت بغاوت' قرار دیا گیا تھا۔

سابق صدر محمد مرسی کے اقتدار پر فوجی شب خون کے بعد سے ترکی کی جانب سے سامنے آنے والا بیان بیرون دنیا کا سب سے زیادہ سخت ردعمل تھا۔