.

افغانستان: امریکی فوجی اڈے پر کام کرنیوالے آٹھ افغانی ہلاک

سرکاری حکام نے الزام طالبان پر لگا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے سرکاری ذرائع کے مطابق طالبان نے جنوبی کابل کے علاقے میں ایک امریکی فوجی اڈے پر کام کرنے والے آٹھ افغانی باشندوں گولی مار کر ہلاک کر دیا۔ صوبہ لوگر کے ڈپٹی پولیس افسر راس خان صادق نے خبر رساں ادارے کو بتایا کہ طالبان نے شانک فوجی کیمپ پر کام کرنے والے آٹھ افغانی باشندوں کو گاڑی سے اتار کر انکے سروں میں گولیاں مار کر ہلاک کیا ہے۔

ڈپٹی پولیس افسر کے مطابق ہلاک ہونے والے افغانی باشندوں کی لاشیں مل گئی ہیں جن کو مارنے سے پہلے مبینہ طور پر ان کی آنکھوں پر پٹیاں باندھی گئی تھیں ۔ افغانستان کے مختلف علاقوں میں افغان باشندوں کو امریکی اور نیٹو فوجی اڈوں پر تعمیراتی کاموں کےلیے استعمال کیا جاتا ہے۔

صوبہ لوگر کی انتظامیہ کے اعلی عہدیدار دین محمد درویش نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ مرنے والے عام اور غریب افغانی باشندوں کی لاشیں ایک گاوں سے ملی ہیں ۔ عہدیدار نے افغانی باشندوں کی ہلاکت کا الزام طالبان پرعائد کیا تاہم ابھی طالبان کی طرف سے اس واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ہے ۔