.

پاکستان کے وفاقی وزیر مذہبی امور کی امام کعبہ السدیس سے ملاقات

ہر سال مسجد الحرام اور مسجد نبوی کے آئمہ پاکستان کے دورے پر آئیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے وفاقی وزیر برائے مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی سردار محمد یوسف نے گزشتہ روز امام کعبہ اور الحرمین الشریفین کے معاملات کے حل کے لئے قائم پریزیڈنسی کے سربراہ شیخ عبدالرحمان السدیس سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔

پاکستان میں مسلم لیگ [نواز] کی حکومت قائم ہونے کے بعد کسی بھی حکومتی عہدیدار کا سعودی عرب کا یہ پہلا دورہ ہے۔

اس موقع پر پاکستانی وزیر کے ساتھ سعودی عرب میں پاکستان کے سفیر محمد نعیم خان اور دیگر پاکستانی سفارتکار بھی موجود تھے۔ وزیر مذہبی امور نے شیخ السدیس کو پاکستانی وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کا نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا۔ اس موقع پر سردار محمد یوسف کا کہنا تھا کہ پاکستان نے خادمِ الحرمین الشریفین شاہ عبداللہ کی جانب سے جاری کردہ پروگرام کے مطابق بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے کوششوں کا آغاز کر دیا ہے۔

ملاقات کے دوران وفاقی وزیر سردار یوسف نے شیخ السدیس کو پاکستان آنے کی دعوت دی۔ شیخ السدیس نے محمد یوسف کے سعودی عرب آنے پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاکستان ایک مضبوط ملک ہے جس کے ساتھ سعودی عرب کے مثالی تعلقات رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ شاہ عبداللہ پاکستان اور اس کے عوام کو بہت قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ اسی لئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ ہر سال مسجد حرام اور مسجد نبوی کے آئمہ حضرات پاکستان کا دورہ کیا کریں گے۔

سردار محمد یوسف نے اس موقع پر شیخ السدیس سے درخواست کی کہ وہ مسلم امہ اور خاص طور پر پاکستان اور اس کے عوام کی ترقی اور خوشحالی کے لئے دعا کریں۔

اس سے پہلے پاکستانی وزیر نے بین الاقوامی اسلامی ریلیف آرگنائزیشن [آئی آئی آر او] کے سیکریٹری جنرل شیخ احسان بن صالح طیب سے ملاقات کی اور ان کے ادارے کی جانب سے پاکستان میں کئے گئے ریلیف ورک پر تبادلہ خیال کیا۔ شیخ احسان نے پاکستانی وزیر کو اپنے ادارے کی مختلف سرگرمیوں کے بارے میں آگاہ کیا اور انہیں پوری دنیا میں کئے جانے والے ریلیف ورک کے بارے میں ایک دستاویزی فلم دکھائی۔

اس موقع پر ڈائریکٹر آئی آئی آر او نے کہا کہ "آئی آئی آر او کے لئے پاکستان کی بہت اہمیت ہے کیوںکہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تعلقات بہت گہرے اور ہر طرح سے آزمائے ہوئے ہیں یہ دوطرفہ تعلقات صرف حکومتی سطح پر نہیں بلکہ دونوں ممالک کے عوام کے درمیان بھی موجود ہیں۔"

پاکستانی وزیر سردار محمد یوسف کا کہنا تھا کہ سعودی عرب ہر پاکستانی کے لئے دوسرے گھر کی طرح ہے۔

ملاقات کے دوران شیخ طیب اور سردار یوسف نے پاکستان می جاری ریلیف منصوبوں پر بات چیت کی اور مزید شعبوں میں تعاون کی ضرورت پر زور دیا۔