.

شام: کار بم دھماکے میں معروف کرد سیاست دان ہلاک

قامشیلی میں کرد لیڈر کی قیام گاہ کے باہر کار بم حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے ایک معروف کرد سیاست دان کو ترکی کی سرحد کے نزدیک واقع شہر قامشیلی میں ان کی قیام گاہ کے باہر بم حملے میں ہلاک کردیا گیا ہے۔

کرد سیاسی ذرائع کے مطابق بم عیسیٰ حسو کی کار میں نصب کیا گیا تھا۔وہ جونہی کہیں جانے کے لیے کار میں سوار ہوئے تو اس کو دھماکے سے اڑا دیا گیا۔مقتول کردوں کی اعلیٰ کونسل کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے رکن تھے۔

ترکی کی کرد نواز جماعت ''امن اور جمہوریت پارٹی'' نے ان کے قتل کی مذمت کی ہے لیکن واقعہ کی مزید تفصیل نہیں بتائی۔ واضح رہے کہ گذشتہ کئی ماہ سے کرد جنگجوؤں کی شام کے شمالی علاقے میں کنٹرول کے لیے صدر بشارالاسد کی وفادار فورسز اور باغیوں، دونوں کے خلاف لڑائی ہورہی ہے۔

ان جھڑپوں میں متعدد کرد جنگجو اور القاعدہ سے وابستہ تنظیموں کے کارکنان مارے جا چکے ہیں۔ کرد جنگجو اسدی فورسز اور باغی جنگجوؤں دونوں کی اپنے علاقے میں موجودگی کے خلاف ہیں اور وہ ان کی مسلح مزاحمت کر رہے ہیں۔