اخوان کی ریلیوں سے پہلے مصر میں فوجی تنصیبات کی سیکیورٹی سخت

مرسی نواز دھرنا کیمپ ختم کرنے کی حکومتی دھمکی مسترد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصری فوج نے اخوان المسلمون کی جانب سے نماز جمعہ کے بعد ملین مارچ کال سے پہلے حفاظتی اقدامات کے طور پر قاہرہ کی صلاح سالم شاہراہ پر واقع ری پبلیکن گارڈز کلب اور رابعہ العدویہ سکوائر کے قریب واقع فوجی تنصیاب کی سیکیورٹی سخت کر دی ہے۔ اخوان المسلمون نے 'مصر کو فوجی بغاوت نامنظور' کے عنوان سے آج احتجاجی ریلیوں کی کال دے رکھی ہے۔

معزول صدر محمد مرسی کے حامیوں کو وزارت داخلہ کی جانب سے رابعہ العدویہ میں ایک ماہ سے جاری دھرنا کیمپ ختم کرنے کی 'ہدایت' کو مسترد کرتے ہوئے جمعہ کو ملین مارچ کی کال دے رکھی ہے۔ ایک بیان میں 'صدر مرسی کی صدارت کے قانونی جواز کی حمایت میں بننے والے قومی اتحاد' نے شہر کی 33 مساجد کے باہر سے نماز جمعہ کے بعد احتجاجی ریلیاں نکالنے کی کال دے رکھی ہے۔

یاد رہے کہ ملین مارچ کی کال وزارت داخلہ کی جانب سے اخوان المسلمون کے حامیوں کے شہر میں مختلف مقامات پر دھرنا کیمپ پرامن طریقے سے ختم کرنے کے اعلان کے بعد دی گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں