شام : روسی ساختہ میزائل ڈپو پر اسرائیل کا فضائی حملہ ناکام

اسرائیل، شام پر مزید حملے بھی کر سکتا ہے: امریکی انٹیلی جنس حکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام میں روسی اسلحے سے بھرے ڈپو کو مکمل طور پر تباہ کرنے کے لیے کیا گیا ایک اسرائیلی فضائی حملہ ناکام ہو گیا ہے۔ امریکی حکام کے مطابق اسرائیل کی طرف سے یہ حملہ بحری جنگی جہازوں کے خلاف استعمال کیے جانے والے روسی ساختہ میزائیلوں تباہ کرنے کے لیے کیا گیا تھا۔ تاہم شام کے اس طرح کے اسلحہ ڈپوؤں پراسرائیلی حملے آئندہ بھی جاری رہیں گے۔

امریکی حکام کی جانب سے کیے گئے انکشاف کے مطابق اسرائیلی طیاروں نے شام کے بندر گاہی شہر لاذاقیہ کے نزدیک ''یاک ہاونٹ''میزائیلوں کے لیے مبینہ طور پر قائم ڈپو پر پانچ جولائی کو فضائی حملہ کیا۔ اگلے روز چھ جولائی کو اسرائیل نے ہدف بنائی گئی مذکورہ جگہ کی تصاویر جاری کیں جن میں ایک تباہ کیے گئے وئیر ہاوس کو تباہ شدہ حالت میں دکھایا گیا تھا جبکہ دیگر مبینہ اسلحہ ڈپوؤں کا ایک سلسلہ بھی دکھایا گیا، جنہیں مکمل طور پر تباہ نہیں کیا جا سکا۔

امریکی انٹیلیجنس حکام کے مطابق شام نے روسی ساختہ میزائیلوں میں سے کم از کم ''یاک ہاونٹ'' کی کچھ تعداد کو ان کے لانچنگ پیڈز اور وئِیر ہاوسز سے اسرائیلی حملے سے پہلے ہی منتقل کر دیا۔ امریکی رپورٹس میں کہا گیا گیا ہے کہ اسرائیلی فضائیہ کے طیاروں نے شامی سرحدوں کیخلاف ورزی کیے بغیر اپنا مشن پورا کرنے کی کوشش کی۔ اسرائیلی طیارے بحر متوسط کے مشرق کی طرف سے اڑ کر فضا سے زمین پر کارروائی کی۔ امریکی انٹیلی جنس حکام نے ان اطلاعات کی تردید کی ہے کہ ان حملوں سب میرین استعمال کی گئی ۔

واضح رہے ان دنوں اسرائیل اس بار ے میں چوکس ہے کہ کسی بھی طرح شام کے جدید ٹیکٹیکل ہتھیار حزب اللہ کے ہاتھ نہ لگ جائیں۔ اس سے پہلے ماہ جنوری میں اسرائیل طیاروں نے روسی ساختہ زمین سے فضا میں مار کرنے والے ایس اے 17 کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جاتے ہوئے نشانہ بنایا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں