پرفیوم چوری": اسرائیلی مرکزی بنک کی گورنرشپ کے لیے نا اہلی کا باعث

لیڈرمین جنسی اسکینڈل کے باعث عہدے سے دستکش ہوئے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فلسطینیوں کا پورا ملک ڈکار جانے والے یہودیوں کے لیے"پرفیوم" کی ایک بوتل چوری کرنا کوئی بڑی بات نہیں لیکن اسرائیلی مرکزی بنک کے گورنر شپ کے عہدے کے لیے نامزد سابق امیدوار پرفیوم چوری کےایک پرانے اسکینڈل کے باعث اس اعلیٰ منصب سے محروم ہو گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیلی وزیراعظم اور ان کی کابینہ کو ملک کے مرکزی بنک کے سربراہ کے لیے کسی 'مناسب' شخص کی تلاش میں قدرے مشکل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ حکومت کو یکے بعد دیگرے چند دنوں میں سینٹرل بنک کی گورنرشپ کے لیے تین نام تبدیل کرنا پڑے ہیں۔

چند روز پیشتر نیتن یاھو نے یعقوب فرینکل کو سینٹرل بنک کا گورنر نامزد کیا تھا۔ نامزدگی کے ایک ہفتے سے بھی کم وقت میں مسٹر فرینکل کا ہانگ کانگ کے ایک بین الاقوامی ہوائی اڈے سے سنہ 2006ء میں پرفیوم کی بوتل چوری کرنے کا اسکینڈل سامنے آیا، جس کے بعد انہوں نے خود کو اس عہدے کے لیے نا اہل قرار دیتے ہوئے اپنا نام واپس لے لیا۔

فرینکل کی تعیناتی سے قبل سبکدوشی کے بعد وزیراعظم نیتن یاھو اور وزیرمالیات یائرلابیڈ نے مشہور ماہر اقتصادیات اور"ھبوعلیم" بنک کے مشیر لیو لیڈرمین کو سینٹرل بنک کے اعلیٰ عہدے کے لیے تجویز کیا۔ ابھی لیڈرمین کے کاغذات کی جانچ پڑتال جاری تھی کہ ذرائع ابلاغ میں خبریں آنا شروع ہوئیں کہ وہ 'تواہم پرستی' کا شکار ہیں اور جوتشیوں اور نجومیوں سےکے مشوروں پر انحصار کرتے ہیں۔

اس الزام کے باعث انہیں اسرائیل کے لبرل حلقوں میں شرمندگی ہوئی ہے تاہم ان کا کہنا ہے کہ نجومیوں سے مشورہ صرف تفریح کی غرض سے ہوتا ہے ورنہ وہ ان کے مشوروں پر انحصار نہیں کرتے۔

اسرائیلی ریڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مرکزی بنک کے عہدے سے سبکدوشی نجومیوں سے تعلق کا نتیجہ نہیں بلکہ اس کے کچھ عائلی اسباب ہیں۔ نجومیوں سے وہ صرف تفریح کے لیے ملتے رہتے ہیں"۔

اسرائیل کے عبرانی اخبار"ہارٹز" کی رپورٹ کے مطابق لیڈرمین کی دستبرداری کے پس پردہ ان کا ڈویچئے بنک کی ملازمت کے دور کا ایک سیکس اسکینڈل ہے جس کے منظرعام پرآنے کے بعد انہیں بنک کی ملازمت فوری طور پر چھوڑنا پڑی تھی۔

اسرائیلی حکومت کی اعلیٰ افسران کی تقرری کی ذمہ دار کمیٹی ان تمام الزامات کا جائزہ لے رہی ہے تاہم وزیراعظم نیتن یاھو نے مجبورا اسٹانٹلے فیچر کواس عہدے کے لیے نامزد کیا ہے۔ مسٹر فیچر بنک آف اسرائیل کے ایک اعلیٰ عہدے پرکام کے علاوہ عالمی مالیاتی فنڈ"آئی ایم ایف" میں بھی کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں