.

شامی وزیردفاع کا دورۂ حمص، ''فاتح'' فوجیوں سے ملاقات

''دہشت گردوں'' کے مقابلے میں فتح پر فوجیوں کی بہادری کی تعریف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے وزیردفاع جنرل فہد جاسم الفریج نے سوموار کو وسطی شہر حمص کا دورہ کیا ہے اوروہاں باغیوں سے جنگ جیتنے والے فوجیوں سے ملاقات کی ہے۔

شام کی سرکاری خبررساں ایجنسی سانا کی اطلاع کے مطابق جنرل فہد نے حمص کے علاقے خالدیہ کالونی کا دورہ کیا جہاں فوج نے امن وامان اور استحکام کو بحال کردیا ہے۔ اس شہر پر شامی فوج نے کئی ہفتوں کی خونریز جھڑپوں، مسلسل ایک ماہ تک وحشیانہ گولہ باری اور فضائی حملوں کے بعد قبضہ کیا ہے۔

جون کے بعد شامی فوج کی باغیوں کے مقابلے میں یہ دوسری بڑی کامیابی ہے۔ اس سے پہلے شامی فوج نے لبنانی ملیشیا حزب اللہ کی مدد سے صوبہ حمص کے شہر القصیر پر قبضہ کیا تھا۔

شامی وزیردفاع نے فوجیوں سے خطاب میں کہا کہ ''خالدیہ کالونی کو آزاد کرانا ان کی شجاعت و بہادری کا بڑا ثبوت ہے۔ اس علاقے کی تنگ گلیوں میں دہشت گردوں کا مقابلہ اور عمارتوں کو دہشت گردوں سے پاک کرنا عظیم فوجی مہارت کا مظہر ہے''۔

انھوں نے بھی اپنے صدر بشارالاسد کی طرح باغی جنگجوؤں اور منحرف فوجیوں کو دہشت گرد قرار دیا ہے اور کہا کہ ''ہم نے ان کا پیچھا کرنے کا عزم کررکھا ہے اور ہم اس دہشت گردی پر فاتح ٹھہریں گے جس کو اسّی سے زیادہ ممالک کی حمایت حاصل ہے اور جس کا مقصد خطے میں امریکی صہیونی منصوبے کا نفاذ ہے''۔